مانچیسٹر ٹیسٹ: آسٹریلیا کی پوزیشن مضبوط

Image caption انگلینڈ کو فالو آن سے بچنے کے لیے 328 رنز بنانے ہوں گے

مانچیسٹر میں کھیلے جا رہے ایشز سیریز کے تیسرے ٹیسٹ میچ کے دوسرے دن کے اختتام پر انگلینڈ نے آسٹریلیا کے خلاف دو وکٹوں کے نقصان پر 52 رنز بنا لیے۔

دوسرے دن کھیل کے اختتام پر ایلسٹر کک اور جو ناتھن ٹراٹ کریز پر موجود تھے اور دونوں نے بالترتیب 35 اور 2 رنز بنائے تھے۔

انگلینڈ کو آسٹریلیا کی برتری ختم کرنے کے لیے مذید 475 رنز کی ضرورت ہے اور پہلی اننگز میں اس کی آٹھ وکٹیں باقی ہیں۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

انگلینڈ کی جانب سے ایلسٹر کک اور جو روٹ نے اننگز کا آغاز کیا۔

دونوں بلے بازوں نے پہلی وکٹ کی شراکت میں 47 رنز بنائے۔

آسٹریلیا کی جانب سے پیٹر سڈل نے دو وکٹیں حاصل کیں۔

اس سے پہلے تیسرے ٹیسٹ میچ کے دوسرے دن چائے کے وقفے پر آسٹریلیا نے انگلینڈ کے خلاف 7 وکٹوں کے نقصان پر 527 رنز بنا کر اپنی اننگز ڈیکلئیر کر دی تھی۔

آسٹریلیا کی جانب سے کپتان مائیکل کلارک اور سٹیون فِن نے دوسرے دن کے کھیل کا آغاز کیا۔

دونوں بلے بازوں نے ذمہ دارانہ بیٹنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے ٹیم کے سکور پر مذید 50 رنز کا اضافہ کیا۔

آسٹریلیا کی جانب سے کپتان مائیکل کلارک نے 23 چوکوں کی مدد سے 187 رنز بنائے۔

آسٹریلیا کے دوسرے نمایاں بلے بازوں میں سٹیون فِن نے 89، کرس راجرز نے 84 جبکہ بریڈ ہیڈن نے 65 اور مچل سٹارک نے 66 رنز بنائے۔

بریڈ ہیڈن اور مچل سٹارک نے آٹھویں وکٹ کے لیے 97 رنز کی ناقابلِ شکست شراکت قائم کی۔

میچ کےدوسرے دن آسٹریلیا کو چوتھا نقصان اس وقت اٹھانا پڑا جب 343 رنز کے مجموعی سکور پر سٹیون فِن 89 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔

365 رنز کے مجموعی سکور پر آسٹریلیا کی پانچویں وکٹ اس وقت گری جب ڈیوڈ وارنر پانچ رنز بنا کر پویلین لوٹ گئے۔

انگلینڈ کی جانب سے سوان نے چار جبکہ بریسنن اور براڈ نے ایک وکٹ حاصل کی۔

اس سے پہلے آسٹریلیا نے پہلے دن کھیل کے اختتام پر 3 وکٹوں کے نقصان پر 303 رنز بنائے تھے۔

پہلے دن کی خاص بات آسٹریلوی کپتان مائیکل کلارک اور سٹیون فِن کی شاندار بیٹنگ تھی۔

دونوں بلے بازوں نے چوتھی وکٹ کی شراکت میں 214 رنز بنائے۔

جمعرات کو شروع ہونے والے میچ میں آسٹریلیا نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔

اسی بارے میں