بولٹ کی ایک اور جیت، تمغوں کا عالمی ریکارڈ برابر

Image caption یوسین بولٹ اب عظیم رنر کارل لوئس اور ایلیسن فیلکس کے برابر آ گئے ہیں

روس کے دارالحکومت ماسکو میں جاری ورلڈ ایتھلیٹکس چیمپیئن شپ میں اتوار کو جمیکا کے يوسین بولٹ چار سو میٹر مقابلے میں طلائی تمغہ جیت کر دنیا کے سب سے کامیاب رنر بن گئے ہیں۔

100اس سے قبل وہ 100 میٹر اور 200 میٹر میں طلائی تمغہ پہلے ہی جیت چکے ہیں۔

اس طرح انہوں نے اپنے کیریئر میں اب تک آٹھ طلائی سمیت 10 تمغے جیت لیے ہیں۔ وہ اب عظیم رنر کارل لوئس اور ایلیسن فیلکس کے برابر آ گئے ہیں۔

لوئس کے پاس آٹھ طلائی، ایک چاندی اور ایک کانسی کا تمغہ ہے جبکہ بولٹ کے پاس آٹھ طلائی اور دو کانسے کے تمغے ہیں۔

بولٹ نے اتوار کو 37.36 سیکنڈ کا وقت لے کر 400 میٹر ریس میں طلائی تمغہ اپنے نام کیا جبکہ اس ریس میں امریکہ کو دوسری اور کینیڈا کو تیسری پوزیشن ملی۔

ریس میں برطانوی ایتھلیٹ تیسرے نمبر پر تھے لیکن تکنیکی بنیاد پر اپیل کے بعد کینیڈا کو تیسری پوزیشن مل گئی۔

ماسکو میں ورلڈ ایتھلیٹکس چیمپیئن شپ میں تیسرا سونے کا تمغہ حاصل کرنے کے بعد بولٹ نے کہا ’یہ بہت ہی زبردست ہے۔ میں اپنی جیت کا تسلسل برقارا رکھوں گا۔ میں محنت کرتا رہوں گا. میری کوشش ہے کہ عظیم لوگوں کی فہرست میں میرا نام رہے۔‘

اسی بارے میں