ہرارے ٹیسٹ میں زمبابوے کی فتح، سیریز برابر

Image caption زمبابوے کی اس فتح کے نتیجے میں یہ ٹیسٹ سیریز ایک ایک سے برابر ہوگئی

ہرارے میں زمبابوے نے پاکستان کو دوسرے کرکٹ ٹیسٹ میچ میں 24 رنز سے شکست دے دی ہے۔

پاکستان کو یہ میچ جیتنے کے لیے 264 رنز کا ہدف ملا لیکن میچ کے آخری دن کھانے کے وقفے کے بعد پاکستانی ٹیم دوسری اننگز میں 239 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

پاکستان کے کپتان مصباح الحق کی 79 رنز کی ناقابلِ شکست اننگز بھی ان کی ٹیم کو فتح نہ دلوا سکی۔

میچ کے آخری دن جب پاکستان کی دوسری اننگز دوبارہ شروع ہوئی تو اسے جیت کے لیے مزید 107 رنز درکار تھے۔ پاکستان کی پانچویں وکٹ 163 کے مجموعی سکور پر گری جب عدنان اکمل چھتارا کی گیند پر ایل بی ڈبلیو ہوگئے۔

ان کی جگہ عبدالرحمان کھیلنے آئے اور انہوں نے مصباح الحق کے ساتھ مل کر 34 رنز کی اہم شراکت قائم کی جس کے بعد وہ 16 کے انفرادی سکور پر پینیانگارا کی پہلی وکٹ بنے۔

سعید اجمل صرف 2 اور جنید خان ایک رن بنا سکے اور ان دونوں کو بھی چھتارا نے آؤٹ کیا۔ پاکستان کے آخری بلے باز راحت علی رن آؤٹ ہوئے۔

Image caption مصباح الحق کی سیریز میں ایک اور نصف سنچری رائیگاں گئی

زمبابوے کی جانب سے چھتارا نے باون رنز کے عوض پانچ وکٹیں لے کر اپنی ٹیم کی کامیابی میں کلیدی کردار ادا کیا۔

اس میچ میں زمبابوے نے ٹاس جیت کر پہلے کھیلنے کا فیصلہ کیا تھا اور پہلی اننگز میں 294 رنز بنائے تھے جس کے جواب میں پاکستانی ٹیم پہلی اننگز میں 230 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی تھی۔

زمبابوے نے اپنی دوسری اننگز میں 199 رنز بنائے تھے اور پہلی اننگز میں 64 رنز کی برتری کی بدولت اسے پاکستان پر 263 رنز کی مجموعی برتری حاصل ہوئی تھی۔

زمبابوے کی اس فتح کے نتیجے میں یہ ٹیسٹ سیریز ایک ایک سے برابر ہوگئی ہے۔ دو میچوں کی سیریز کا پہلا میچ پاکستان نے 221 رنز سے جیتا تھا۔

یہ تیسرا موقع ہے کہ زمبابوے نے پاکستان کو کوئی ٹیسٹ میچ ہرایا ہے۔ اس سے قبل 1995 اور 1998 میں بھی زمبابوے کی ٹیم پاکستان کے خلاف ٹیسٹ میچ جیت چکی ہے۔

زمبابوے کے ہاتھوں شکست کے نتیجے میں پاکستانی ٹیم کی ٹیسٹ درجہ بندی میں بھی کمی آئی ہے اور وہ چوتھے سے چھٹے نمبر پر چلی گئی ہے۔

اسی بارے میں