اوپنر احمد شہزاد، شان مسعود ٹیسٹ ٹیم میں شامل

Image caption احمد شہزاد نے ون ڈے اور ٹی ٹوئنٹی میچوں میں ملک کی نمائندگی کر چکی ہے

اوپنرز احمد شہزاد۔ شان مسعود اور مڈل آرڈر بیٹسمین اسد شفیق کو جنوبی افریقہ کے خلاف ٹیسٹ ٹیم میں شامل کر لیا گیا ہے۔احمد شہزاد اور شان مسعود ابھی تک کوئی ٹیسٹ میچ نہیں کھیلے ہیں۔

پاکستان اور جنوبی افریقہ کے درمیان پہلا ٹیسٹ 14 اکتوبر سے ابوظہبی میں کھیلا جائے گا۔

محمد حفیظ ٹیسٹ ٹیم سے باہر

یاد رہے کہ پاکستان کرکٹ بورڈ کی سلیکشن کمیٹی نے پانچ اکتوبر کو بارہ رکنی ٹیم کا اعلان کیا تھا اور کہا تھا کہ بقیہ تین کھلاڑیوں کو شارجہ میں پاکستان اے اور جنوبی افریقہ کے درمیان سہ روزہ میچ کی کارکردگی کی بنیاد پر ٹیم میں جگہ ملے گی۔

یہ بات طے تھی کہ اوپنرز احمد شہزاد اور شان مسعود حتمی اسکواڈ میں جگہ بنائیں گے کیونکہ بارہ رکنی ٹیم میں صرف ایک اوپنر خرم منظور کو شامل کیا گیا تھا البتہ ٹیم میں شامل ہونے کے لیے اصل مقابلہ اسد شفیق اور فیصل اقبال کے درمیان تھا۔

شارجہ کے سہ روزہ میچ میں فیصل اقبال متاثرکن کارکردگی کا مظاہرہ کرنے میں کامیاب نہ ہوسکے اور صرف دس رنز بناسکے تاہم اسد شفیق نے 42 رنز سکور کیے۔

اس میچ میں احمد شہزاد اور شان مسعود نے نصف سنچریاں سکور کیں اور پہلی وکٹ کی شراکت میں 106 رنز بنائے۔

اسد شفیق 21 ٹیسٹ میچوں میں پاکستان کی نمائندگی کرتے ہوئے تین سنچریوں اور سات نصف سنچریوں کی مدد سے 1136 رنز بناچکے ہیں لیکن گذشتہ چند میچز میں قابل ذکر کارکردگی نہ دکھانے پر ان کی ٹیم میں پوزیشن خطرے سے دوچار ہے۔

جنوبی افریقہ کے خلاف پہلے ٹیسٹ میں نصف سنچری اور پھر دوسرے ٹیسٹ میں سنچری سکور کرنے کے بعد سے وہ سات اننگز میں صرف 74 رنز بنا پائے ہیں جن میں سب سے بڑا سکور 19 رنز ہے۔

فیصل اقبال کے لیے سلیکٹرز کو متاثر کرنے کا اچھا موقع تھا جو انہوں نے ضائع کردیا۔

فیصل اقبال نے آخری ٹیسٹ 2010 میں آسٹریلیا کے خلاف سڈنی میں کھیلا تھا جس میں وہ صرف 27 اور سات رنز بنا پائے تھے۔ اس کے بعد سے وہ ٹیم کے ساتھ مختلف دوروں پر جاتے رہے ہیں لیکن یونس خان مصباح الحق اسد شفیق اور اظہرعلی کی موجودگی میں انہیں کھیلنے کا موقع نہیں مل سکا ہے۔

جنوبی افریقہ کے خلاف پاکستانی ٹیم ان کھلاڑیوں پر مشتمل ہے۔ مصباح الحق( کپتان)، خرم منظور، احمد شہزاد، شان مسعود، اظہرعلی، یونس خان، اسد شفیق، عمرامین، عدنان اکمل، محمد عرفان، جنید خان، عبدالرحمن، سعید اجمل اور راحت علی۔

اسی بارے میں