پاکستان، جنوبی افریقہ کے درمیان پہلا ٹیسٹ آج

Image caption پاکستانی اوپنرز کو ماضی قریب میں بہت مشکلات رہی ہیں

پاکستان اور جنوبی افریقہ کے درمیان دو کرکٹ ٹیسٹ میچوں کی سیریز پیر کو متحدہ عرب امارات میں شروع ہو رہی ہے۔ اس سیریز کا پہلا ٹیسٹ میچ ابوظہبی میں کھیلا جائے گا۔

جنوبی افریقہ کے اس دورے میں دونوں ممالک کے مابین دو ٹیسٹ میچ، پانچ ایک روزہ میچ اور دو ٹی ٹوئنٹی میچ کھیلے جائیں گے۔

پاکستان میں بین الاقوامی کرکٹ حفاظتی وجوہات کی بنا پر ختم ہونے کے بعد سے متحدہ عرب امارات میں پاکستان میزبانی کے فرائض انجام دیتا رہا ہے۔

ٹیسٹ کرکٹ کی عالمی درجہ بندی میں جنوبی افریقہ اس وقت پہلے نمبر پر ہے جبکہ پاکستان چھٹے نمبر پر ہے۔ گیند بازوں کی عالمی ٹیسٹ درجہ بندی میں سعید اجمل چوتھے نمبر پر ہیں۔

اس ٹیسٹ سیریز میں پاکستان کرکٹ بورڈ نے ہاٹ سپاٹ ٹیکنالوجی کا استعمال کرنے سے انکار کیا ہے اور تھرڈ امپائر کوگراؤنڈ امپائر کے فیصلوں کا جائزہ لینے کے لیے ’بال ٹریکنگ‘ اور صوتی آلات دستیاب ہوں گے۔

اس ٹیسٹ سیریز میں پاکستانی بلے باز محمد حفیظ کو ٹیم میں شامل نہیں کیا گیا ہے۔ ادھر پاکستانی سپن گیند باز سعید اجمل سے اس سیریز میں اچھی کارکردگی کی توقع کی جا رہی ہے تاہم جنوبی افریقہ کے خلاف گذشتہ سیریز میں ان کی کارکردگی قدرے مایوس کن تھی۔

پاکستانی ٹیم کے کپتان مصباح الحق نے اس بات کا اعتراف کیا ہے کہ جنوبی افریقہ کے بلے باز سعید اجمل کو برطانوی بلے بازوں سے بہتر کھیلتے ہیں۔

متحدہ عرب امارات میں گذشتہ سال سعید اجمل نے انگلینڈ کے خلاف تین ٹیسٹ میچوں میں چوبیس وکٹیں حاصل کیں تھی اور پاکستان نے سیریز تین صفر سے جیت لی تھی۔ اُس سیریز سے پہلے انگلینڈ بھی ٹیسٹ درجہ بندی میں پہلے نمبر پر تھا۔

پاکستان کو بلے بازی کے شعبے میں بہت مشکلات رہی ہیں۔ اس سال پاکستان کے گذشتہ دس ٹیسٹ میچوں میں پہلے تین بلے بازوں نے صرف دو مرتبہ پچاس رنز سے زیادہ کی شراکت داری کی ہے اور پندرہ مرتبہ دس یا اس سے کم رنز کی شراکت ہوئی ہے۔

جنوبی افریقہ نے اپنے پانچوں گذشتہ ٹیسٹ میچ جیتے ہیں۔

اسی بارے میں