بھارت:پونے واریئرز انڈین پریمیئر لیگ سے خارج

Image caption پونے واریئرز کو سہارا گروپ نے 370 ملین امریکی ڈالر میں سنہ 2010 میں خریدا تھا

بھارتی کرکٹ کنٹرول بورڈ یعنی بی سی سی آئی نے انڈین پریمیئر لیگ یعنی آئی پی ایل کی ٹیم ’پونے واريئرز‘ کی فرنچائز کو منسوخ کر دیا ہے۔

یہ فیصلہ سنیچر کو بھارت کے جنوبی شہر چنئی می بی سی سی آئی کی ایگزیکٹو کمیٹی کی ایک میٹنگ میں لیا گیا۔

واضح رہے کہ بینک گارنٹی کے طور اگلے سال کے لیے فرنچائز فیس ادا نہ کرنے کے سبب پونے واریئرز کے خلاف یہ کارروائی کی گئی ہے۔

اس فرنچائز کو بینک گارنٹی کے طور پر اگلے سال کے لیے 170.2 کروڑ روپے ادا کرنے تھے۔

بہر حال پونے واریئرز فرنچائز کے مالک سہارا گروپ نے رواں سال مئی میں ہی آئی پی ایل سے کنارہ کش ہونے کا اعلان کر کے بی سی سی آئی کو یہ عندیہ دے دیا تھا۔

دوسری جانب بی سی سی آئی کا کہنا ہے کہ اس نے گارنٹی کی رقم ادا کرنے کے لیے سہارا گروپ کی کئی بار یاد دہانی کرائی تھی۔

Image caption واریئرز فرنچائزی کے مالک سہارا گروپ نے رواں سال مئی میں ہی آئی پی ایل سے کنارہ کش ہونے کا اعلان کیا تھا

پونے واریئرز کو سہارا گروپ نے سینتیس کروڑ امریکی ڈالر میں سنہ دو ہزار دس میں خریدا تھا۔ آئی پی ایل میں خریدی گئی یہ سب سے مہنگی فرنچائز تھی۔

کرکٹ کے مبصرین کا کہنا ہے کہ پونے واریئرز کی رکنیت منسوخ ہونے سے بی سی سی آئی کو خاصا مالی نقصان اٹھانا پڑے گا۔

آئی پی ایل سے پونے واریئرز کے نکل جانے کے بعد سے ایک بار پھر سےانڈین پریمیئر ليگ میں ٹیموں کی کل تعداد آٹھ رہ جائے گی۔

کرکٹ کے مبصرین کا کہنا ہے کہ یہ امر دلچسپ ہو گا کہ آیا آئی پی ایل کے اگلے سیشن میں ٹیموں کی تعداد آٹھ ہی رہے گی یا پھر بی سی سی آئی کسی نئی فرنچائز کے لیے نیلامی کا اعلان کرے گا۔

واضح رہے کہ آئی پی ایل کے سلسلے میں گزشتہ دنوں بی سی سی آئی تنازعات کا شکار رہا ہے۔

بی سی سی آئی کے صدر این سری نیواسن نے اپنی صدارتی ذمہ داریوں سے کچھ دنوں کے لیے علیحدگی اختیار کر لی تھی مگر ایک بار پھر سے اپنا عہدہ سنبھالنے کے بعد یہ بورڈ کی ایکزیکیٹیو کمیٹی کی پہلی میٹنگ تھی جس میں یہ فیصلہ لیا گیا۔

اسی بارے میں