2012 کا عالمی فٹبال کپ اب موسم سرما میں

Image caption یورپی فٹبال ایسوسی ایشن نے بھی ورلڈ کپ موسم سرما میں منعقد کرانے کا مطالبہ کیا تھا

فٹبال کی عالمی تنظیم فیفا کے صدر سیپ بلاٹر نے کہا ہے کہ قطر میں سنہ 2022 فٹ بال عالمی کپ اب موسم سرما میں منعقد ہو گا۔

قطر کے دورے کے دوران سیپ بلاٹر نے کہا کہ عالمی کپ نومبر یا دسمبر میں منعقد ہو گا اور اس بات کو یقینی بنایا جائے گا کہ سال دو ہزار چودہ کے شروع میں موسم سرما کے اولمپک مقابلوں سے فٹبال ٹورنامنٹ کی تاریخوں کا تصادم نہ ہو۔

’موسم گرما میں فٹبال ورلڈ کپ نامنظور‘

تاہم سیپ بلاٹر کے مطابق فٹبال کے عالمی مقابلے کی حتمی تاریخ کا اعلان فیفا کی ایگزیکٹو کمیٹی کے اجلاس میں ہو گا۔

’کیونکہ جنوری اور فروری میں اولمپک مقابلے منعقد ہونے ہیں، اولمپک آرگنائزیشن، اولمپک فیملی کے احترام میں اور دوسرا کہ ایک ساتھ دو ٹورنامنٹ منعقد نہیں کر سکتے ہیں کیونکہ دونوں کے میڈیا، ٹیلی ویژن اور مارکٹنگ شراکت دار ایک ہیں۔‘

انھوں نے مزید کہا کہ’منطقی یہ ہی ہے کہ اس مقابلے کو اختتام سال کے قریب منعقد کریں اور یہ نومبر اور دسمبر ہو گا، مجھے ابھی حتمی تاریخ کا معلوم نہیں ہے، یہ دس سے دس تک ہو سکتی ہے، اور اب جو بھی مشاورت ہو گی وہ صرف سال کے آخر میں اس عالمی مقابلے کے انعقاد کے حوالے سے ہو گی‘۔

اس سے پہلے ستمبر میں یورپی فٹبال ایسوسی ایشن کے 54 ممالک کا کہنا تھا کہ سنہ 2022 کے قطر فٹ بال عالمی کپ کو موسمِ سرما میں منتقل کیا جائے کیونکہ قطر میں موسم گرما میں شدید گرمی پڑتی ہے۔

برطانیہ میں فٹ بال ایسوسی ایشن کے نائب صدر جم بوئس نے کہا ’اس اجلاس میں یہ فیصلہ کیا گیا ہے کہ سنہ 2022 میں قطر میں کھیلے جانے والا عالمی کپ موسمِ گرما میں نہیں کھیلا جاسکتا‘۔انھوں نے مزید کہا ’تمام ممالک اس بات پر متفق تھے‘۔

بوئس نے کہا کہ اب بحث اس بات پر کی جا رہی ہے کہ آیا عالمی کپ جنوری 2022 میں کھیلا جائے یا نومبر دسمبر میں۔

اسی بارے میں