کاندیولی سپورٹس کمپلکس اب تندولکر کے نام پر

Image caption ممبئی کرکٹ ایسوسی ایشن آنے والی نسل کے کرکٹروں کے لیے بہترین پلیٹ فارم فراہم کرا رہی ہے اوراسی سبب مجھے بھارتی کرکٹ کا مستقبل روشن نظر آ رہا ہے

ممبئی کرکٹ ایسوسی ایشن (ایم سی اے) کے صدر شرد پوار نے سچن کے اعزاز میں منعقدہ ایک تقریب میں اعلان کیا کہ اب سے کاندیولی سپورٹس کمپلکس تندولکر کے نام پر ہوگا۔

ممبئی کرکٹ ایسوسی ایشن (ایم سی اے) کی جانب سے سچن تندولکر کے اعزاز میں ایک پروگرام منعقد کیا گیا جس میں خطاب کرتے ہوئے تندولکر نے کہا کہ شروع ہی سے نئے ٹیلنٹ کو فروغ دینے میں ایم سی اے کا اہم کردار رہا ہے۔

انھوں نے کہا کہ ایم سی اے کے تعاون کو دیکھتے ہوئے یہ کہا جا سکتا ہے کہ ہندوستانی کرکٹ کا مستقبل روشن ہے۔

سچن نے ایسوسی ایشن کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ اسی تنظیم نے ان کی ابتدائی کرکٹ زندگی میں انہیں خاطر خواہ بنیادی سہولیات فراہم کرائیں۔

تندولکر نے کہا: ’ممبئی کرکٹ ایسوسی ایشن کے ساتھ میرا دیرینہ تعلق ہے۔ یہ 29 کو محیط ہے۔ کرکٹ پریکٹس کے دوران مجھے جب بھی کسی چیز کی ضرورت ہوتی تھی اس میں ایم سی اے نے میری پوری مدد کی۔

’تنظیم نے میری تیاریوں کے لیے موزوں پچ، مناسب گیند باز دستیاب کروائے۔ جونیئر سطح سے لے کر ٹیم انڈیا کا حصہ بننے تک کے سفر میں ممبئی کرکٹ ایسوسی ایشن نے مجھے تمام طرح کی سہولیات مہیا کرائیں۔‘

انھوں نے کہا کہ بھارت کے لیے کھیلنا ہمیشہ ان کے یادگار لمحوں میں رہے گا۔ ’ممبئی کرکٹ ایسوسی ایشن آنے والی نسل کے کرکٹرز کے لیے بہترین پلیٹ فارم فراہم کرا رہی ہے اوراسی سبب مجھے بھارتی کرکٹ کا مستقبل روشن نظر آ رہا ہے۔‘

چودہ نومبر سے ممبئی کے وانكھیڈے سٹیڈیم میں سچن ویسٹ انڈیز کے خلاف اپنے ٹیسٹ کیریئر کا آخری اور 200 واں میچ کھیلنے والے ہیں۔ یہ اعزاز پانے والے وہ اب تک دنیا کے واحد کھلاڑی ہیں۔

سچن کی عظیم کامیابیوں کے اعتراف میں پیر کی شام ممبئی کے علاقے كانديولي سپورٹس کمپلیکس میں بڑی تعداد میں سابق کرکٹرز اور شائقین موجود تھے اور بھارت کے عظیم بلے باز کو خراج عقیدت پیش کر رہے تھے۔

اس موقع پر ممبئی کرکٹ ایسوسی ایشن کے صدر شرد پوار بھی موجود تھے۔ شرد پوار نے دنیائے کرکٹ میں سچن کے تعاون کا ذکر کرتے ہوئے اعلان کیا کہ ’كاندیولي سپورٹس کمپلیکس کو اب سے سچن تندولکر جمخانہ کلب کے نام سے پکارا جائے گا۔‘

اس موقعے سے ویسٹ انڈیز کی ٹیم بھی وہاں موجود تھی۔

تندولکر نے اس طرح کی عزت افزائی کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ کلب کے صدر دروازے پر انھیں اپنا نام دیکھنا اچھا لگے گا۔

اسی بارے میں