دوسرا ٹی ٹوئنٹی، سیریز برابر کرنے کا موقع

Image caption جنوبی افریقی ٹیم کلین سوئپ پر نظریں لگائے ہوئے ہے

پاکستان اور جنوبی افریقہ کی کرکٹ ٹیمیں جمعے کی رات دبئی میں دوسرے اور سیریز کے آخری ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میں مدمقابل ہو رہی ہیں۔ دبئی میں کھیلا گیا پہلا ٹی ٹوئنٹی پاکستان کی نو وکٹوں کی مایوس کن شکست پر ختم ہوا تھا۔

جنوبی افریقی ٹیم کلین سویپ پر نظریں لگائے ہوئے ہے، جب کہ پاکستان کی کوشش ہو گی کہ سیریز برابر کر لی جائے۔

پاکستانی ٹیم کی متواتر کے ساتھ مایوس کن بیٹنگ کے بعد تبدیلیوں کے آپشنز بھی نہیں رہے ہیں۔ زیادہ سے زیادہ یہی ہو سکتا ہے کہ صہیب مقصود کو ڈراپ کرکے ناصر جمشید کو واپس لایا جائے۔

کپتان محمد حفیظ کا خود کو نمبر چار پر بیٹنگ کرانے کا فیصلہ ناکام رہا۔ وہ اب تک مجموعی طور پر 12 مرتبہ ڈیل اسٹین کے ہاتھوں آؤٹ ہوچکے ہیں۔

مورنی مورکل اور جے پی ڈومِنی کے وطن واپس چلے جانے کے بعد ہینری ڈیوڈز کو موقع ملنے کی توقع ہے۔ یہ بھی ممکن ہے کہ اے بی ڈی ویلیئرز کو بھی آرام دیا جائے۔

پاکستانی کرکٹ ٹیم کو اس سیریز کے بعد دوبارہ جنوبی افریقہ کا تین ون ڈے اور دو ٹی ٹوئنٹی میچز میں سامنا کرنا ہے۔ یہ سیریز جنوبی افریقہ میں کھیلی جانی ہے جس کے لیے ٹیم کا اعلان چند روز میں متوقع ہے۔

اسی بارے میں