’پاکستان کی ٹیم سے مقابلے کےلیے تیار‘

Image caption سری لنکن ٹیم میں مہیلا جے وردنے اور تلکا رتنے دلشن شامل نہیں ہیں

پاکستان اور سری لنکا کے درمیان طویل سیریز کا آغاز بدھ کو دبئی میں پہلے ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل کے ساتھ ہو رہا ہے۔

اس سیریز میں دونوں ٹیمیں دو ٹی ٹوئنٹی پانچ ایک روزہ اور تین ٹیسٹ میچز کھیلنے والی ہیں۔

پاکستانی ٹیم نے جنوبی افریقہ کے خلاف مشکل سیریز کھیلنے کے بعد دوبارہ متحدہ عرب امارات میں پڑاؤ ڈالا ہے۔

جنوبی افریقہ کے خلاف پاکستان نے ٹیسٹ سیریز ایک ایک سے برابر کی تھی لیکن دونوں ٹی ٹوئنٹی ہارنے کے علاوہ اسے ون ڈے سیریز میں بھی چار ایک سے شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا۔

سری لنکا کو ٹی ٹوئنٹی اور ون ڈے سیریز میں اپنے تجربہ کار بیٹسمین مہیلا جے وردھنے کی خدمات حاصل نہیں ہیں۔ وہ اپنے پہلے بچے کی ولادت کے موقع پر کولمبو میں ہیں۔

سری لنکن ٹیم ٹیسٹ سیریز تلکا رتنے دلشن کے بغیر کھیلے گی جو ٹیسٹ کرکٹ سے ریٹائر ہوچکے ہیں۔

سابق کپتان کمارسنگاکارا کا کہنا ہے کہ سری لنکن ٹیم کی تیاریاں مکمل ہیں کیونکہ اسے پتہ ہے کہ وہ ایک بڑی ٹیم کا مقابلہ کر رہی ہے، ’یقیناً یہ ایک سخت سیریز رہے گی۔‘

سنگاکارا کا کہنا ہے کہ پاکستانی ٹیم نے جنوبی افریقہ کے خلاف دو بڑی سیریز کھیلی ہیں اور اسے متحدہ عرب امارات کے موسم اور وکٹوں کا بخوبی اندازہ ہے۔

سنگاکارا کہتے ہیں کہ مہیلا جے وردھنے اور دلشن کے نہ ہونے کے سبب وہ خود پر کوئی دباؤ محسوس نہیں کرتے۔

ان کا کہنا تھا ’ان دونوں کی جگہ جو بھی ٹیم میں آئے گا اس کے لیے اچھا موقع ہوگا کہ وہ اچھی کرکٹ کھیلے اور اپنی ذمہ داری بخوبی نبھائے۔‘

سنگاکارا کا کہنا ہے کہ سری لنکن ٹیم میں شامل بائیں ہاتھ سے کھیلنے والے بیٹسمین کوشل پریرا ایک خاص ٹیلنٹ ہیں جن سے انہیں بڑی امیدیں وابستہ ہیں۔

سنگاکارا کا کہنا ہے کہ پاکستان کا تیز اور اسپن بولنگ اٹیک متوازن ہے۔ بلاول بھٹی اور انور علی نے عمدگی سے اپنے کریئر کا آغاز کیا ہے جنید خان بھی بہت اچھے بولر ہیں۔

سنگاکارا کے خیال میں آئی سی سی ورلڈ ٹی ٹوئنٹی کے قریب آنے کی وجہ سے ہر ٹی ٹوئنٹی میچ کی اہمیت بڑھ گئی ہے اور ہر ٹیم عالمی ایونٹ کے لیے خود کو تیار کررہی ہے۔

پاکستان اور سری لنکا کے درمیان دس ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل کھیلے جاچکے ہیں جن میں سے چھ پاکستان اور چار سری لنکا نے جیتے ہیں۔

دونوں ٹیمیں آخری مرتبہ گزشتہ سال ورلڈ ٹی ٹوئنٹی کے سیمی فائنل میں مد مقابل ہوئی تھیں جس میں سری لنکا نےسولہ رنز سے کامیابی حاصل کی تھی۔

اسی بارے میں