عمر گل قومی کرکٹ ٹیم میں واپس آگئے

Image caption 29 سالہ عمر گل کو اختتامی اوورز میں یوکر کروانے کا ماہر سمجھا جاتا ہے

پاکستان کے کرکٹ بورڈ نے اعلان کیا ہے کہ فاسٹ بولر عمر گل اتوار کو قومی کرکٹ ٹیم میں شمولیت کے لیے متحدہ عرب امارات پہنچ رہے ہیں۔

پاکستان کی قومی کرکٹ ٹیم اس وقت سری لنکا کے خلاف پانچ ایک روزہ میچوں کی سیریز کھیل رہی ہے جو اس وقت ایک ایک سے برابر ہے۔

ٹی ٹوئنٹی میں عمر گل سال کے بہترین کھلاڑی

عمر گل زخمی ہونے کی وجہ سے گذشتہ نو ماہ سے بین الاقوامی کرکٹ سے باہر تھے۔ وہ پاکستان کے جنوبی افریقہ کے دورے کے دوران زخمی ہوئے تھے اور آسٹریلوی شہر ملبرن میں ان کے گھٹنے کی سرجری ہوئی جس کے بعد انہوں نے پاکستان میں مقامی کرکٹ میں شرکت کی۔

سنیچر کے روز پاکستان کرکٹ بورڈ کے ترجمان نے کہا کہ عمر گل کو قومی سلیکشن کمیٹی اور دورے کی ٹیم انتظامیہ کی درخواست پر بھیجا جا رہا ہے۔

یاد رہے کہ دبئی میں کھیلے جانے والے دوسرے ایک روزہ میچ میں سری لنکا نے پاکستان کو دو وکٹوں سے شکست دے کر سیریز ایک ایک سے برابر کر دی تھی جس کے بعد پاکستانی ٹیم کی اختتامی اوورز میں بولنگ پر شدید تنقید کی گئی تھی۔

بی بی سی کے نامہ نگار عبد الرشید شکور کا کہنا تھا کہ یہ شکست اس لیے تکلیف دہ ہے کہ میچ کے بیشتر حصے میں پاکستانی ٹیم حاوی رہی لیکن فیصلہ کن گھڑی میں بولرز کے اعصاب بکھرگئے اور سری لنکن لوئر آرڈر بیٹنگ اس پر حاوی ہوگئی۔

’پاکستانی ٹیم نے آخری 10 اوورز میں 92 رنز بٹورے تھے لیکن سری لنکا کے87 رنز کی اہمیت اس لیے اہم ہے کہ وہ جیت کا سبب بنے۔‘

29 سالہ عمر گل کو اختتامی اوورز میں یارکر کروانے کا ماہر سمجھا جاتا ہے۔ انہوں نے ٹیسٹ کرکٹ میں 163، ایک روزہ کرکٹ میں 161 اور ٹی ٹوئنٹی کرکٹ میں 74 وکٹیں لے رکھی ہیں۔

حال ہی میں انٹرنیشنل کرکٹ کونسل نے عالمی کرکٹ کے مختلف زمروں میں سال کے بہترین کھلاڑیوں کے ناموں کا اعلان کیا جس میں ٹی ٹوئنٹی میں سال کی بہترین کارکردگی کے لیے عمر گل کا انتخاب کیا گیا۔

ٹی ٹوئنٹی میں سال کی بہترین کارکردگی کے لیے انھیں مارچ سنہ 2013 میں جنوبی افریقہ کے خلاف بہترین بولنگ کی بنیاد پر نامزد کیا گیا تھا۔

اسی بارے میں