دبئی: پاکستانی بیٹنگ ناکام، سری لنکا مضبوط پوزیشن میں

Image caption سری لنکن سپنر ہیراتھ نے تین پاکستانی کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا

متحدہ عرب امارات کے شہر دبئی میں پاکستان کے خلاف دوسرے ٹیسٹ میچ میں سری لنکا کی ٹیم ایک مضبوط پوزیشن میں ہے۔

میچ کے پہلے دن پاکستان کو پہلی اننگز میں 165 رنز پر آؤٹ کرنے کے بعد سری لنکا نے کھیل کے اختتام پر ایک وکٹ کے نقصان پر 57 رنز بنا لیے تھے۔

سری لنکا کو پاکستان کی برتری کے خاتمے کے لیے مزید 108 رنز درکار ہیں۔

بدھ کو سری لنکا نے ٹاس جیت کر پاکستان کو پہلے بیٹنگ کی دعوت دی تو پاکستانی بیٹنگ بری طرح ناکام رہی۔

تفصیلی سکور کارڈ

پاکستانی اوپنر خرم منظور کے علاوہ کوئی بھی بلے باز جم کر نہ کھیل سکا۔ خرم نے سات چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے 73 رنز بنائے۔

پاکستان کے سات بلے بازوں کا سکور دوہرے ہندسوں میں بھی داخل نہ ہو سکا۔

پاکستان کو اننگز کے آغاز پر ہی اس وقت نقصان اٹھانا پڑا جب احمد شہزاد 27 گیندوں میں صرف تین رنز بنا کر پویلین لوٹ گئے، اس وقت پاکستان کا مجموعی سکور 28 تھا۔

Image caption خرم منظور نے 83 گیندوں میں نصف سنچری مکمل کی

دوسری وکٹ 50 رنز کی شراکت کے بعد اس وقت گری جب محمد حفیظ پردیپ کی تیزی سے اندر آتی گیند پر بولڈ ہوئے۔

اس کے بعد پاکستانی بلے باز کوئی بھی قابلِ ذکر شراکت قائم نہ کر سکے اور وقفے وقفے سے وکٹیں گرنے کا سلسلہ جاری رہا اور پوری ٹیم 165 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی۔

اننگز کے آخر میں بلاول بھٹی نے جارحانہ انداز میں 24 رنز کی اننگز کھیل کر پاکستان کا مجموعی سکور 165 تک پہنچایا۔

سری لنکا کی جانب سے ہیراتھ اور پردیپ نے تین، تین جبکہ لکمل اور ارانگا نے دو، دو وکٹیں لیں۔

پاکستانی ٹیم نے اس ٹیسٹ کے لیے ٹیم میں ایک تبدیلی کی اور زخمی وکٹ کیپر عدنان اکمل کی جگہ سرفراز احمد کو ٹیم میں شامل کیا۔

یاد رہے کہ پہلے ٹیسٹ میچ کے دوران عدنان کی انگلی پر چوٹ لگ گئی تھی۔ سری لنکا کی دوسری اننگ کے دوران یونس خان نے وکٹ کیپنگ کی تھی۔

ابوظہبی میں پاکستان اور سری لنکا کے مابین کھیلا جانے والا پہلا ٹیسٹ میچ بغیر کسی نتیجے کے ختم ہو گیا تھا۔

اسی بارے میں