یایا تورے سال کے بہترین افریقی کھلاڑی

Image caption یایا تورے نے مسلسل تیسری بار بہترین افریقی کھلاڑی کا اعزاز جیت کر سیموئیل ایتو کا ریکارڈ برابر کر دیا ہے

آئیوری کوسٹ اور انگلینڈ کے فٹ بال کلب مانچسٹر سٹی کے کھلاڑی يايا تورے نے مسلسل تیسری بار بہترین افریقی فٹبالر کا اعزاز جیت لیا ہے۔

یایا تورے اس کے علاوہ بی بی سی کے افریقن فٹبالر آف دی ایئر کا اعزاز بھی جیت چکے ہیں۔

يايا تورے کا مقابلہ اپنے ہم وطن اور ترکش کلب غلاطاسراي کے کھلاڑی ديدييئر دروغبا اور نائجیریا اور انگلش کلب چیلسی کے مِڈ فیلڈر جون اوبي ميكيل سے تھا۔ پینتیس سالہ دروغبا 2006 اور 2009 میں افریقہ کے بہترین کھلاڑی کا اعزاز جیت چکے ہیں۔

یایا تورے نے اعزاز جیتنے کے بعد کہا:’میں بہت خوش ہوں کہ میں جو کچھ کر رہا ہوں اچھے انداز میں کر رہا ہوں۔‘

یایا تورے نے تسلیم کیا کہ اس بار افریقی فٹبالر آف دی ایئر کا فیصلہ کرنے والے ججوں کے لیے، جو افریقہ کی قومی ٹیموں کے کوچ اور ٹیکنیکل ڈائریکٹر ہیں، ایک مشکل کام تھا۔

تیس سالہ یایا تورے نے تیسری بار یہ اعزاز جیت کر گھانا کے کھلاڑی ایبدی پیلے اور کیمرون کے سیموئیل ایتو کے ریکارڈ کو برابر کر دیا ہے۔

ایبدی پیلے نے بہترین افریقی کھلاڑی کا اعزاز 1991 سے 1993 تک مسلسل جیت کر پہلی ہیٹ ٹرک کی تھی۔ اس کے علاوہ کیمرون اور انگلش کلب چیلسی کے کھلاڑی سیموئیل ایتو نے 2003 سے 2005 تک یہ اعزاز جیتا۔

یایا تورے بہترین افریقی کھلاڑی قرار پانے کی وجہ سے فیفا کے بہترین کھلاڑی کے لیے شارٹ لسٹ ہونے والے 23 کھلاڑیوں کی فہرست میں شامل ہو چکے ہیں۔

مصر کے محمد ابوطریقہ افریقہ میں ہی مقیم بہترین افریقی کھلاڑی قرار پائے ہیں۔ اسی طرح مصر کے فٹبال کلب ال اہلی کو افریقہ کا بہترین کلب چناگیا۔

اسی بارے میں