سعید اجمل کو آرام کی ضرورت نہیں: مصباح

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption مصباح الحق پر بھی کڑی تنقید کی جاتی رہی ہے

پاکستانی کرکٹ ٹیم کے کپتان مصباح الحق اس تجویز سے بالکل متفق نہیں کہ آف اسپنر سعید اجمل کو آرام کی غرض سے کچھ وقت کرکٹ سے دور رہنا چاہیے۔

واضح رہے کہ سری لنکا کے خلاف ٹیسٹ سیریز میں سعید اجمل زیادہ کامیاب ثابت نہیں ہو سکے تھے، اور تین ٹیسٹ میچوں میں صرف دس وکٹیں حاصل کر پائے تھے، جس کے بعد انہیں سابق آف اسپنر ثقلین مشتاق نے یہ مشورہ دیا تھا کہ اگر وہ اپنے کریئر کو طول دینا چاہتے ہیں تو کچھ وقت کرکٹ سے دور رہ کر آرام کریں۔

مصباح الحق نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے کہا کہ کرکٹرز کو آرام کا وقت باآسانی مل جاتا ہے۔ سری لنکا کے خلاف ٹیسٹ سیریز کے بعد اگلے ماہ ایشیا کپ اور پھر مارچ میں ورلڈ ٹی ٹوئنٹی ہے، ان دو ایونٹس کے بعد پاکستانی کرکٹرز چار ماہ کرکٹ سے دور رہیں گے۔

انھوں نے کہا کہ سعید اجمل ورلڈ کلاس اسپنر ہیں جو چاہے وکٹیں لیں یا نہ لیں وہ ٹیم کے لیے مواقع پیدا کرتے ہیں۔ صرف دو میچوں پہلے تک وہ سو سےزائد وکٹیں حاصل کر رہے تھے تو سب اچھا تھا۔ صرف دو میچوں میں وکٹیں نہ ملنے کے نتیجے میں یہ کہا جانے لگا کہ وہ تھک گئے ہیں۔

واضح رہے کہ سعید اجمل نے گذشتہ سال بین الاقوامی کرکٹ میں 111 وکٹیں حاصل کیں جن میں آٹھ ٹیسٹ میچوں میں 19، 33 ون ڈے میچوں میں 62 اور نو ٹی ٹوئنٹی میچوں میں دس وکٹیں شامل ہیں۔

وہ واحد بولر تھے جنہوں نے گذشتہ سال دو مرتبہ کسی ٹیسٹ میچ میں دس وکٹیں حاصل کیں۔

مصباح الحق نے کہا: ’ہم لوگ کسی بھی کھلاڑی کے بارے میں رائے قائم کرنے میں بہت جلدی کرتے ہیں۔ سو میچوں کی عمدہ کارکردگی ایک طرف اور دو میچوں میں پرفارمنس نہ ہو تو ہم کہہ دیتے ہیں کہ اس کی چھٹی کرو۔ یہ کھلاڑی کے لیے تکلیف دہ بات ہوتی ہے۔‘

مصباح الحق نے کہا کہ جب حریف ٹیم محتاط ہوکر کھیلتی ہے اور کنڈیشنز بھی بولر کے لیے موافق نہ ہوں تو پھر اس کے لیے صورتحال آسان نہیں ہوتی۔ حالیہ سیریز میں رنگانا ہیرتھ کو بھی وکٹیں یا تو ٹیل اینڈرز کی ملیں یا پھر ان بیٹسمینوں کی جنھوں نے ان پر جارحانہ انداز اختیار کرنے کی کوشش کی تھی۔ پہلے دو ٹیسٹ میچوں میں وکٹوں میں نہ باؤنس تھا نہ ٹرن، اسی وجہ سے بولرز کو مشکل پیش آئی۔

مصباح الحق نے کہا کہ یہ کرکٹ میں اکثر ہوتا ہے کہ اچھی بالنگ کرنے کے باوجود وکٹیں نہیں ملتیں اور اچھی بیٹنگ کرنے کے باوجود بڑا اسکور نہیں ہو پاتا۔

اسی بارے میں