ایشز میں شکست، فلاور کوچ کے عہدے سے ہٹ گئے

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption اینڈی فلاور کی قیادت میں انگلینڈ نے آسٹریلیا کے خلاف تین ایشز سیریز اور ٹی ٹوئنٹی کا عالمی کپ جیتا تھا

انگلینڈ کی کرکٹ ٹیم کے ٹیکنیکل ڈائریکٹر اینڈی فلاور آسٹریلیا کے ہاتھوں ایشز سیریز میں وائٹ واش کے بعد اپنا عہدہ چھوڑ رہے ہیں۔

زمبابوے سے تعلق رکھنے والے 45 سالہ اینڈی فلاور نے اس بات کا فیصلہ انگلینڈ اور ویلز کرکٹ بورڈ کے مینیجنگ ڈائریکٹر پال ڈاؤنٹن کے ساتھ جمعرات کو ہونے والی ملاقات کے بعد کیا۔

خیال رہے کہ اینڈی فلاور کی قیادت میں انگلینڈ نے آسٹریلیا کے خلاف تین ایشز سیریز اور ٹی ٹوئنٹی کا عالمی کپ جیتا تھا۔

انگلینڈ کے ایک روزہ میچوں کے کوچ ایشلے جائلز اینڈی فلاور کی جگہ لینے میں پسندیدہ امید وار ہیں تاہم اس بارے میں فیصلہ دو ہفتوں میں متوقع ہے۔

یہ خیال ظاہر کیا جا رہا ہے کہ جمعرات کو ہونے والی ملاقات میں اینڈی فلاور نے پال ڈاؤنٹن کو تجویز دی ہے کہ کرکٹ کے تینوں طرز کی کرکٹ کے لیے انگلینڈ کا ایک ہی کوچ ہونا چاہیے۔

اینڈی فلاور نے فروری سنہ 2009 میں اپنی تعیناتی کے بعد سے نومبر سنہ 2012 تک انگلینڈ کے کرکٹ امور پر مکمل کنٹرول کا مزہ لیا۔

انگلینڈ کے سابق وکٹ کیپر بلے باز اینڈی فلاور نے فروری سنہ 2009 میں انگلینڈ کے اس وقت کے کوچ پیٹر مورس اور کیون پیٹرسن کے درمیان اختلاف اور دونوں کی جانب سے ایک ہی روز نوکری چھوڑنے کے بعد انگلینڈ کے ڈائریکٹر کا عہدہ سنبھلا تھا۔

اینڈی فلاور کے بطور ڈائریکٹر تعیناتی کے بعد پہلے میچ میں انگلش ٹیم جمیکا میں صرف 51 رنز پر آؤٹ ہو گئی تھی تاہم فلاور نے اسے کچھ ہی عرصے میں بین الاقوامی کرکٹ کا ایک اہم پروفیشنل یونٹ بنا دیا۔

انگلینڈ اینڈ ویلز کرکٹ بورڈ کے مطابق نئے ٹیکنیکل ڈائریکٹر کی نوکری کا اشتہار شائع کیا جائے گا اور اس وقت تک ایشلے جائلز ویسٹ انڈیز کے خلاف فروری اور مارچ میں کھیلی جانے والی ایک روزہ میچوں کی سیریز میں انگلینڈ ٹیم کی سربراہی کریں گے۔

اسی بارے میں