جاوید میانداد کرکٹ بورڈ کے عہدے سے مستعفی

Image caption نومبر 2008ء میں اعجاز بٹ کے دور میں پاکستان کرکٹ بورڈ کے ڈائریکٹر جنرل بنائے گئے تھے

سابق ٹیسٹ کرکٹر جاوید میانداد نے پاکستان کرکٹ بورڈ کے ڈائریکٹر جنرل کے عہدے سے استعفٰی دے دیا ہے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے ترجمان نے استعفی موصول ہونے کی تصدیق کردی ہے اور کہا ہے کہ اس معاملے پر پی سی بی کی منیجمنٹ کمیٹی اپنے آئندہ اجلاس میں غور کرے گی۔

بی بی سی کو یہ معلوم ہوا ہے کہ جاوید میانداد جمعرات کے روز پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین نجم سیٹھی کے کمرے میں گئے تھے اور ایک لفافہ دے کر چند منٹوں میں ہی باہر آگئے تھے۔

جاوید میانداد جن کا شمار پاکستان کے بہترین بلے بازوں میں ہوتا ہے نومبر 2008ء میں اعجاز بٹ کے دور میں پاکستان کرکٹ بورڈ کے ڈائریکٹر جنرل بنائے گئے تھے لیکن جنوری 2009ء میں انہوں نے اپنی تنخواہ کم ہونے کا اعتراض کرتے ہوئے استعفی دے دیا تھا تاہم دو ماہ بعد دوبارہ یہ عہدہ سنبھال لیا تھا۔

ڈائریکٹر جنرل کی حیثیت سے ان کی ذمہ داری ڈومیسٹک کرکٹ کے معیار میں بہتری لانا اور اصلاحات کرنا تھا اس بارے میں انہوں نے ایک مرتبہ میڈیا کو طویل پریزنٹیشن بھی دی تھی تاہم موجودہ سیزن میں فرسٹ کلاس کرکٹ کے معیار پر خاصی تنقید ہوئی ہے۔

وہ مجوزہ پاکستان سپر لیگ سے بھی وابستہ تھے جو پاکستان میں امن وامان کی خطرناک صورتحال کی وجہ سے ابھی تک محض کاغذوں پر ہی رہی ہے۔

جاوید میانداد تین مرتبہ پاکستانی کرکٹ ٹیم کے کوچ بھی رہے لیکن کھلاڑیوں سے اختلافات اور مختلف وجوہات کی بنا پر انہیں یہ عہدہ بھی چھوڑنا پڑا۔

وہ پہلی بار 1998ء میں کوچ بنے تھے لیکن 1999 کے عالمی کپ سے پہلے ہی یہ عہدہ چھوڑگئے۔ دوسری مرتبہ وہ 2000 ء میں کوچ بنائے گئے لیکن اگلے سال ہی انہیں اس عہدے سے ہٹادیا۔ کوچ کی حیثیت سے وہ تیسری مرتبہ میں ٹیم میں آئے لیکن جون 2004میں ان کی جگہ باب وولمر کو کوچ بنادیا گیا تھا۔

اسی بارے میں