میک کلم نے بھارتیوں کو خون کے آنسو رلا دیا

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میں بیٹنگ کے تمام اہم ریکارڈز کے سامنے میک کلم کا نام درج ہے

بیٹسمین کی بے رحمی ہی درحقیقت کرکٹ کی خوبصورتی ہے، یہ اس جارحانہ سلوک کا بھی جواب ہے جو بولر بیٹسمین کے ساتھ روا رکھتا ہے۔ نیوزی لینڈ کے برینڈن میک کلم کو یہ جواب دینا خوب آتا ہے۔

ون ڈے اور ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل ہو یا آئی پی ایل، میک کلم نے اپنے مزاج اورخواہش کے مطابق بیٹنگ کی ہے۔ لیکن اب وہ ٹیسٹ کرکٹ کی پرسکون فضا میں بھی جیسے طوفان لے آئے ہیں۔

ویلنگٹن ٹیسٹ میں جو کچھ ہوا، وہ مہندر سنگھ دھونی کے لیے کسی بھیانک خواب سے کم نہ تھا۔

میچ کے تیسرے دن نیوزی لینڈ کی برتری صرف چھ رنز کی ہوسکی تھی اور اس کی پانچ وکٹیں باقی تھیں، لیکن اگلے دو دن برینڈن میک کلم نے مہندر سنگھ دھونی اور ان کے کھلاڑیوں کو خون کے آنسو رلا دیا۔

اس اننگز کے دوران انہوں نے وکٹ کیپر بی جے واٹلنگ کے ساتھ چھٹی وکٹ کے لیے 352 رنز کی ریکارڈ شراکت قائم کی جس نے نیوزی لینڈ کو اپنی تاریخ کے سب سے بڑے اسکور 680 رنز آٹھ کھلاڑی آؤٹ تک پہنچنے میں مدد دی۔

بھارتی بولنگ کے سامنے برینڈن میک کلم کا یہ بے رحمانہ سلوک نیا نہیں تھا۔ آک لینڈ کے پہلے ٹیسٹ میچ میں بھی انہوں نے ڈبل سنچری بنائی تھی اور چار سال قبل حیدرآباد دکن ٹیسٹ میں بھی انہوں نے 225 رنز اسکور کیے تھے۔

میک کلم ون ڈے میں اوپنر کی حیثیت سے آئے تھے ساتھ میں وکٹ کیپنگ کی ذمہ داری بھی خوب نبھائی۔ وہ ون ڈے انٹرنیشنل میں سب سے زیادہ کیچز اور اسٹمپ کرنے والے وکٹ کیپروں میں چھٹے نمبر پر ہیں لیکن شائقین ان کی جارحانہ بیٹنگ کے دیوانے ہیں۔

آئی پی ایل میں کولکتہ نائٹ رائیڈرز کی طرف سے بنگلور کے خلاف ان کی 13 چھکوں اور دس چوکوں سے مزین 158 کی اننگز آج بھی لوگ نہیں بھولے ہیں جس میں ایسا لگ رہا تھا جیسے وہ ٹینس بال سے کھیل رہے ہوں۔

ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میں بیٹنگ کے تمام اہم ریکارڈز کے سامنے میک کلم کا نام درج ہے۔ وہ سب سے زیادہ 1959 رنز، سب سے زیادہ دو سنچریاں، سب سے زیادہ 12 نصف سنچریاں اور سب سے زیادہ 80 چھکے لگانے والے بیٹسمین ہیں۔

ٹیسٹ میچوں میں ساتویں نمبر پر اپنے کریئر کی ابتدا کرنے والے میک کلم نے اپنی نو میں سے پانچ سنچریاں ساتویں نمبر پر کھیلتے ہوئے اسکور کی ہیں لیکن حیدرآباد دکن کی ڈبل سنچری نے انہیں اوپنر بنا دیا۔ تاہم اب وہ ٹیسٹ ٹیم میں مڈل آرڈر بیٹسمین ہیں۔

میک کلم کی ٹرپل سنچری پر سب سے زیادہ خوشی سابق کپتان مارٹن کرو کو ہے جو خود 23 سال قبل سری لنکا کے خلاف صرف ایک رن کی کمی سے ٹرپل سنچری مکمل نہ کر سکے تھے۔

نیوزی لینڈ کے وزیراعظم، وزرا اور کرکٹروں کے تعریفی کلمات ٹوئٹر پر بھرے پڑے ہیں۔ بھارتی ذرائع ابلاغ نے بھی میک کلم کی اس اننگز کی تعریف کی ہے۔

اسی بارے میں