باکسر محمد علی کے دستانے آٹھ لاکھ ڈالر میں نیلام

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption محمد علی نے اس وقت کے ہیوی ویٹ چیمپیئن سونی لِسٹن کو شکست دے کر عالمی شہرت حاصل کی تھی

باکسنگ کے سابق عالمی چیمپیئن محمد علی کے وہ گلوز جنہیں پہن کر انہوں نے اپنا پہلا ہیوی ویٹ ٹائٹل جیتا تھا 836,500 امریکی ڈالر میں نیلام ہوئے ہیں۔

تقریباً پچاس برس قبل ہونے والے اس باکسنگ مقابلے میں محمد علی نے اس وقت کے ہیوی ویٹ چیمپیئن سونی لِسٹن کو شکست دی تھی۔

یہ قیمت نیلامی کرنے والے ادارے ہریٹیج آکشنز نے اپنی ویب سائٹ پر شائع کی ہے اور انہیں خریدنے والے کی شناخت نہیں بتائی گئی ہے۔

امریکہ کی ریاست کینٹکی سے تعلق رکھنے والے باکسر محمد علی نے، جو اس وقت کیسیئس کلے کے نام سے جانے جاتے تھے، اس میچ کے بعد عالمی شہرت حاصل کی تھی۔

محمد علی نے سنہ 1960 میں روم میں منعقد ہونے والے اولمپکس مقابلوں میں طلائی تمغہ جیتا تھا جس کے چار سال بعد انہوں نے لِسٹن کا سامنا کیا۔

سونی لسٹن اس وقت فیورٹ تھے اور کئی مقابلوں میں اپنے حریفوں کو پہلے ہی راؤنڈ میں ناک آؤٹ کر چکے تھے۔

25 فروری 1954 کو ہونے والے اس مقابلے میں محمد علی نے ساتویں راؤنڈ میں لِسٹن کو شکست دی جس کے بعد وہ اپنے بازو اٹھائے رِنگ میں اپنی فتح کا جشن منانے لگے۔

اس مقابلے کے بعد کلے کا کہنا تھا کہ ’میں نے دنیا کو حیران کر دیا ہے۔‘

اس مقابلے کے اگلے ہی دن انہوں نے اعلان کیا کہ وہ اسلام قبول کر رہے ہیں اور اپنا نام بدل کر محمد علی رکھ رہے ہیں۔

اس سے اگلے برس محمد علی نے لِسٹن کو پہلے ہی راؤنڈ میں ناک آؤٹ کر دیا اور مزید آٹھ مرتبہ اپنے ٹائٹل کا دفاع کیا۔

محمد علی کو 1967 میں ویتنام جنگ کے لیے فوجی سروس میں شرکت سے انکار پر ان کے باکسنگ ٹائٹل سے محروم کر دیا گیا اور ان پر ساڑھے تین سال کی پابندی عائد کر دی گئی تھی۔

امریکہ کی سپریم کورٹ نے سنہ 1971 میں ان کو بے قصور قرار دیا جس کے بعد انہوں نے مزید دو مرتبہ یہ ٹائٹل جیتا۔

اسی بارے میں