ملنگا نے تباہی مچا دی، پاکستان ہار گیا

بنگلہ دیش میں ایشیا کپ کے پہلے میچ میں سری لنکا نے پاکستان کو 12 رنز سے ہرا دیا ہے۔ پاکستان 297 رنز کا ہدف کا تعاقب کرتے ہوئے 284 رنز تک جا پہنچا لیکن پھر ملنگا کے تابڑ توڑ حملوں کے سامنے کوئی نہ ٹہر سکا اور پوری ٹیم 284 رنز پر آؤٹ ہو گئی۔

مصباح الحق نے 73 اور عمر اکمل نے 74 رنز کی عمدہ اننگز کھیلیں لیکن ٹیم کو فتح سے ہمکنار نہ کر سکے۔

سری لنکا نے مقررہ 50 اوورز میں چھ وکٹوں کے نقصان پر 296 رنز بنائے۔

سری لنکا کی اننگز کی خاص بات اوپنر تھری مانے کی شاندرا سنچری تھی۔

پاکستان بمقابلہ سری لنکا، تصاویر

انھوں نے 11 چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے 101 رنز بنائے۔

سری لنکا کی جانب سے کمار سنگا کارا نے 8 چوکوں کی مدد سے 67 اور کپتان اینجول میتھیوز نے پانچ چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے 55 رنز بنائے۔

پاکستان کی جانب سے شاہد آفریدی اور عمر گل نے دو دو جب کہ سعید اجمل نے ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

ایشیا کپ کے پہلے میچ میں سری لنکا نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔

ایشیا کپ سنہ دو ہزار چودہ کے شیڈول کے مطابق ہر ٹیم چار میچ کھیلے گی اور میچ جیتنے کی صورت میں جیتنے والی ٹیم کو چار پوائنٹس ملیں گے اور میچ برابر اور ٹائی ہونے کی صورت دونوں ٹیموں کو دو پوائنٹس دیے جائیں گے۔

دسمبر میں دونوں ٹیموں کے درمیان کھیلی گئی ایک روزہ میچوں کی سیریز پاکستان نے تین دو سے جیت لی تھی۔ تاہم ان تمام میچوں میں دلچسپ کھیل دیکھنے کو ملا۔

سری لنکا نے اپنے حالیہ پانچ ایک روزہ میچوں میں سے چار جیتے ہیں جبکہ ایک میں اس کو شکست ہوئی۔ دوسری جانب پاکستان نے حالیہ پانچ ایک روزہ میچوں میں سے تین جیتے اور دو ہارے۔

ہر دو سال بعد کرکٹ کھیلنے والے ایشیائی ملکوں کی ٹیموں کے درمیان ایک روزہ میچوں کے یہ مقابلے مسلسل دوسری مرتبہ بنگلہ دیش میں منعقد کیے جا رہے ہیں۔

اس مرتبہ پاکستان، بھارت، سری لنکا اور بنگلہ دیش کے علاوہ افغانستان کی ٹیم بھی ٹورنامنٹ میں شرکت کر رہی ہے۔

دو سال قبل کھیلے گئے ٹورنامنٹ کی بڑی بات بنگلہ دیش کی ٹیم کا بھارت کو شکست دے کر فائنل میں پہنچا تھا۔ اس میچ میں کامیابی کے بعد بنگلہ دیش کی ٹیم کے کھلاڑیوں کی توقعات اور حوصلہ بڑھ گئے تھے اور فائنل میں انھوں نے پاکستان کا جم کا مقابلہ کیا۔

لیکن میچ کے آخری اوور میں پاکستان کے بالر اعزاز چیمہ نے ان کی امیدوں پر پانی پھیر دیا۔ پہلی مرتبہ کسی بڑے ٹورنامنٹ میں کامیابی کے اتنے قریب پہنچنے کے صدمے سے بنگلہ دیشی کے کھلاڑی اپنے جذبات پر قابو نہ رکھ سکے اور ان کے کئی کھلاڑی کپتان مشفع الرحمان سمیت میدان میں پھوٹ پھوٹ کے روتے نظر آئے۔