’میرے پاس لائسنس تھا اور میں نے اونچی شاٹس کھیلیں‘

تصویر کے کاپی رائٹ
Image caption شاہد آفریدی نے بنگلہ دیش ٹیم کی بھی کھل کر تعریف کی

شاہد آفریدی نے 25 گیندوں پر59 رن بنا کر پاکستان کو ایشیا کپ کے ایک مشکل میچ میں فتح سے ہمکنار کرنے کے بعد کہا ہےکہ ’میرے پاس لائسنس تھا اور میں نے بس اونچی شاٹس کھیلیں۔‘

شاہد آفریدی کو بنگلہ دیش کے خلاف اس شاندار کارکردگی پر مین آف دی میچ بھی قرار دیا گیا۔

میچ کے بعد اپنے تاثرات کا اظہار کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ وہ کوشش کر سکتے ہیں اور وہ ہی انھوں نے کی۔

ایک سوال کے جواب میں کہ جب آپ کی گیندوں پر بنگلہ دیشی بلے باز شاٹس کھیل رہے تھے تو آپ کے ذہن میں کیا خیالات آ رہے تھے، شاہد آفریدی نے کہا کہ انھیں یہ یقین تھا کہ اس پِچ پر دس اور ساڑھے دس رنز کی اوسط سے رنز بنانا مشکل نہیں ہے اور ایسا ہی ہوا۔

ان سے جب پوچھا گیا کہ ان کا بیٹنگ کوچ کون ہے تو انھوں نے ہنستے ہنستے کہا کہ کوئی نہیں۔ انھوں نے کہا معین خان اور ظہیر عباس ان کا اعتماد اور حوصلہ بڑھاتے رہتے ہیں۔

انھوں نے کہ وہ اپنے کیریئر کے جس مقام پر ہیں وہاں انھیں کوچنگ سے زیادہ اعتماد کی ضرورت ہے اور ان پر ٹیم مینجمنٹ اعتماد کرتی ہے۔

شاہد آفریدی نے بنگلہ دیشی ٹیم کو بھی زبردست خراج تحسین پیش کیا اور کہا کہ انھوں نے بہتریں کھیل پیش کیا۔

شاہد آفریدی نے کہا کہ پاکستان کو بولنگ بہتر کرنے کی ضرورت ہے اور فائنل سے قبل اس کی کوشش کی جائے گی۔

شاہد آفریدی نے بھارت کے خلاف میچ میں بھی آخری اوور میں دو چھکوں کی مدد سے پاکستان کی فتح میں اہم کردار ادا کیا تھا۔

اسی بارے میں