میلہ سٹیڈیم کے باہر سجا ہے

تصویر کے کاپی رائٹ bbc
Image caption یہ میلہ اپریل کی چھ تاریخ تک چلے گا

ڈھاکہ میں آئی سی سی ورلڈ ٹی ٹوئنٹی کے مقابلوں کے موقع پر ایسا دکھائی دیتا ہے جیسے میرپور کے تمام راستے شیر بنگلہ نیشنل کرکٹ سٹیڈیم آ کر ختم ہوتے ہوں۔

ڈھاکہ شہر کے مرکز سے تقریباً دس کلومیٹر کے فاصلے پر واقع یہ سٹیڈیم اس وقت کسی میلے کی شکل اختیار کرچکا ہے۔

میدان کے اندر میچ سے لطف اندوز ہونے والے شائقین تو اپنی جگہ لیکن لوگوں کی ایک بہت بڑی تعداد سٹیڈیم کے باہر اس ماحول سے لطف اٹھارہی ہے جیسے یہ ان کے لیے کوئی پکنک پوائنٹ ہو۔ ان لوگوں میں بچے بڑے سب ہی موجود ہیں۔

شام ہوتے ہی سٹیڈیم کے لائٹس ٹاور روشن ہوجاتے ہیں۔ سٹیڈیم سے باہر کی سڑک پر بھی مختلف شبیہوں کی لائٹس لگائی گئی ہیں۔ یہ روشنیاں بھی ماحول کو خوبصورت بنادیتی ہیں۔

رات کو یہ چراغاں دیکھنے کے لیے فیملیز دور دور سے آتی ہیں۔

سٹیڈیم کے اطراف کی سڑکیں عام ٹریفک کے لیے بند ہیں لیکن سٹیڈیم کے عین سامنے واقع تمام دکانیں کھلی ہیں جنہیں سکیورٹی کے نام پر بند نہیں کیا گیا ہے البتہ سکیورٹی اہلکار کسی بھی شخص کو سٹیڈیم کے گیٹ کے سامنے کھڑے نہیں رہنے دیتے۔

Image caption ڈھاکہ میں دوسرے ملکوں سے کرکٹ شائقین بھی بڑی تعداد میں پہنچ گئے ہیں

آئی سی سی ورلڈ ٹی ٹوئنٹی کی کوریج کے لیے ڈھاکہ میں موجود پاکستانی صحافی سہیل عمران کا کہنا ہے کہ وہ دو ہزار گیارہ کے عالمی کپ میں بھی یہاں موجود تھے اس وقت بھی شیربنگلہ سٹیڈیم کے باہر یہ میلہ اسی طرح سجا تھا اور اس وقت تو ہزاروں کی تعداد میں لوگ میدان سے باہر جمع تھے حالانکہ کوئی بڑی سکرین نہیں لگی تھی لیکن میدان کے اندر کا شور سن کر باہر کا مجمع بھی جذباتی ہوجاتا تھا۔

شیربنگلہ سٹیڈیم بنگلہ دیشی کرکٹ بورڈ کا ہیڈکوارٹر ہے۔ یہ سٹیڈیم شیربنگال مولوی فضل حق کے نام پر ہے ۔بنگلہ دیشی کرکٹ اکیڈمی بھی اسی سٹیڈیم میں واقع ہے۔

سٹیڈیم میں داخل ہوتے ہوئے کئی چیزیں سب کو اپنی جانب متوجہ کرلیتی ہیں جن میں قابل ذکر وہ قدآدم سٹمپس ہیں جن میں ایک گیند بیلز اڑارہی ہے۔بولر اور بیٹسمین کے مجسمے اور کٹ آؤٹ سے بھی نظر نہیں ہٹتی۔

آئی سی سی ورلڈ ٹی ٹوئنٹی کے موقع کی مناسبت سے تمام ٹیموں کے پرچم بھی سٹیڈیم کے مرکزی دروازے پر لہرا رہے ہیں۔

اسی بارے میں