بارسلونا فٹبال کلب پر کھلاڑی خریدنے کی پابندی

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption فیفا نے کم عمر کھلاڑیوں کی شناخت ظاہر نہیں کی ہے

فٹبال کے نگراں ادارے فیفا نے اٹھارہ سال سے کم عمر کھلاڑیوں سے معاہدہ کرنے پر سپین کے فٹبال کلب بارسلونا پر پابندی لگائی ہے کہ وہ 14 ماہ تک کھلاڑیوں کا تبادلہ نہیں کر سکے گا۔

فیفا نے قوانین کی خلاف ورزی کرنے پر بارسلونا پر 2015 کے موسم سرما تک کھلاڑیوں کے تبادلے پر پابندی لگائی۔

اس کے علاوہ کلب پر تین لاکھ پانچ ہزار ڈالر جرمانہ بھی عائد کیا گیا ہے۔

پابندی کے تحت بارسلونا کلب نئے کھلاڑی خرید نہیں سکے گا لیکن اسے کھلاڑی فروخت کرنے کی اجازت ہو گی۔

اس کے علاوہ سپین کی فٹبال فیڈریشن پر بھی اسی نوعیت کے الزام کے تحت تین لاکھ 40 ہزار ڈالر کا جرمانہ عائد کیا گیا ہے اور چھوٹی عمر کے کھلاڑیوں کے بین الاقوامی سطح پر تبادلے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے ہدایت کی گئی ہے کہ وہ نگرانی کے طریقۂ کار میں باقاعدگی لائے۔

بارسلونا امید کر رہا ہے کہ سیزن کے اختتام پر ایک نئے گول کیپر سے معاہدے کریں گا کیونکہ ان کا ایک عرصے سے گول کیپر وکٹر ویلڈس معاہدہ ختم ہونے کے بعد کلب چھوڑ کر جانے والے ہیں۔

فیفا کی تحقیقات کے مطابق بارسلونا کلب نے سال 2009 سے سال 2013 تک 18 سال سے کم عمر کئی کھلاڑیوں کو رجسٹرڈ کیا اور انھوں نے میچ کھیلے۔ فٹبال کے عالمی ادارے کے مطابق بارسلونا کلب اور سپین کی فٹبال فیڈریشن نے 10 کھلاڑیوں کے معاملے میں قواعد کی سنگین خلاف ورزی کی ہے۔

فیفا نے بی بی سی کو بتایا کہ ان کھلاڑیوں کی شناخت ظاہر نہیں کی جائے گی۔

اسی بارے میں