ورلڈ ٹی ٹوئنٹی: بھارت اور سری لنکا فائنل میں

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption وراٹ کھولی نے اس میچ میں بھی نصف سنچری بنائی

ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ کے دوسرا سیمی فائنل میں بھارت نے ایک سو تہتر کے ہدف کی طرف اپنے سفر کا آغاز بڑے پر اعتماد انداز میں کیا ہے۔

تفصیلی سکور کارڈ

بھارت کی جیت میں ایک مرتبہ پھر وراٹ کھولی ہی اہم رہے اور انھوں نے 72 رن بنائے اور وہ بھی چوالیس گیندوں می۔

اس ہدف کو حاصل کرنے میں بھارت کو زیادہ دقت پیش نہیں آئی اور بھارت نے بڑی آسانی سے یہ ہدف حاصل کر لیا۔

میچ کے آغاز ہی جارحانہ انداز میں ہوا اور پہلے ہی اوور میں تین چوکوں کی مدد سے چودہ رن بنے جس کے بعد اگلے اوور میں نو رن بنے اور یوں پہلے دو اوور میں بھارت کے بلے بازوں نے تیئس رن بنائے۔

تیسرا اوور ڈریل سٹین نے کرایا اس اوور میں روہت شرما نے شاندار چھکا لگایا اور سکور تینتیس رن پر پہنچ گیا۔

روہت شرما آؤٹ ہونے والے پہلے کھلاڑی تھے جو چوتھے اوور میں ایک اونچا شاٹ لگانے کی کوشش میں اپنی وکٹ گنوا بیٹھے۔

نو اوور کے اختتام پر بھارت نے تہتر رن بنائے تھے اور اس کے بلے باز سنگل اور ڈبل رن لینے پر زیادہ توجہ دے رہے تھے۔

دسویں اوور میں انجنتا ریہانے آؤٹ ہوئے تو اس وقت بھارت کا سکور ستتر رن تھا۔ ان کی وکٹ پارنل نے لی۔ وہ اونچا شاٹ کھیلنا چاہتے تھے جس پر وہ کیچ آؤٹ ہوئے۔

گیارہویں اوور میں عمران طاہر اور یوراج سنگھ آمنے سامنے آ گئے۔ عمران طاہر کو کئی مرتبہ یوراج نے نکل کر کھیلنا شروع کیا لیکن وہ کامیاب نہ ہو سکے۔ بارہویں اوور میں کھولی نے زبردست چوکا لگایا۔

تیرہویں اوور میں یوراج عمران طاہر کی گیند پر ایک چوکا چرانے میں کامیاب ہو ہی گئے۔انھوں نے آف سٹمپ گیندوں کو لانگ لیگ کی طرف کھیل دیا۔

چودہویں اوور میں پھر ڈریل سٹین کو بالنگ کے لیے بلایا گیا۔ اس اوور میں یوراج نے لانگ آن کی طرف ایک سلو بال کو کھیل کر آسانی سے چار رن حاصل کر لیے۔

پندرہویں اوور میں کھولی نے چھکے کےساتھ اپنی نصف سنچری بنائی لیکن اس اوور ہی میں یوراج کیچ آؤٹ ہو گئے۔ ان کا کیچ ڈیویلئرز نے پکڑا۔ اس وقت بھارت کو چوبیس گیندوں پر چالیس رن چاہیں تھے۔

سوہلویں اوور میں سریش رائنا نے چھکا لگایا اور رن اور گیندوں کے فرق کو اور کم کر دیا۔

ڈریل سٹین کے دو اوور باقی تھے اور انھیں سترہواں اوور کرانے کو کہا گیا۔ ڈریل سٹین کے لیے اب بہت دیر ہو چکی تھی اور وہ کھولی کو نہ روک سکے انھوں نے اس اوور میں دو چوکے لگائے۔ اس اوور کے آخری میں انھیں بارہ گیندوں پر دس رن درکار تھے۔

اٹھارہویں اوور میں سریش رائنا آْؤٹ ہو گئے۔

جنوبی افریقہ نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئےانڈیا کو جیت کے لیے 173رنز کا ہدف دیا ہے۔

جنوبی افریقہ کے کپتان فاف ڈوپلیسی نے ٹاس جیت کر پہلے کھیلنے کا فیصلہ کیا۔

جنوبی افریقہ نے فاف ڈوپلیسی کی عمدہ بیٹنگ کی بدولت 172 رنز بنائے۔

جنوبی افریقہ کی طرف سے ہاشم آملہ نے 22، ڈی کاک،6 ، فاف ڈوپلیسی، 58، اے بی ڈویلیئرز10،جے پی ڈومنی 45 اور ملر نے 23 رنز بنائے۔۔

تفصیلی سکور کارڈ

بھارت کی طرف سے سپنر ایشون نے انتہائی عمدہ بولنگ کرتے ہوئے اے بی ڈویلیئرز سمیت تین کھلاڑیو ں کو آؤٹ کیا۔

دھونی اس ٹورنامنٹ میں پہلی مرتبہ ٹاس ہارے ہیں۔ اس سے قبل انھوں نے تمام میچوں میں ٹاس جیتا اور میچ بھی۔

مھندر سنگھ دھونی نے ٹاس کے بعد ٹی وی پر بات کرتے ہوئے کہا کہ اگر وہ ٹاس جیت جاتے تو وہ خود بیٹنگ کرتے۔

بھارت کی ٹیم میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی اور جنوبی افریقہ کی ٹیم ڈوپلیسی ایک میچ کی پابندی کے دوبارہ ٹیم میں شامل ہو گئے ہیں۔

ان مقابلوں میں دفاعی چیمیئن ویسٹ انڈیم کی ٹیم پہلے سیمی فائنل میں سری لنکا سے ہارنے کے بعد مقابلوں سے باہر ہو چکی ہے۔

اس سیمی فائنل میں کامیابی حاصل کرنے والی ٹیم کا مقابلہ اتوار کو سری لنکا سے ہوگا۔

بھارت کی ٹیم ان مقابلوں میں اب تک تمام میچ اسی میدان میں کھیلی ہے جبکہ جنوبی افریقہ کا اس میدان میں پہلا میچ ہے۔

اسی بارے میں