محمد عامر بہت جلد واپس آ جائیں گے: نجم سیٹھی

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption آئی سی سی نے قانون میں ترمیم کے لیے ایک نئی کمیٹی بنائی ہے جو جون میں محمد عامر کے کیس پر نظرِ ثانی کرے گی

پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین نجم سیٹھی نے امید ظاہر کی ہے کہ فاسٹ بولر محمد عامر بہت جلد کرکٹ کھیل سکیں گے۔

انھوں نے دبئی میں آئی سی سی کے اجلاس سے واپسی کے بعد لاہور میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان نے ’بگ تھری‘ کے منصوبے پر دستخط کرنے کی ہامی بھر لی ہے لیکن اس سلسلے میں پاکستان کرکٹ کو کئی یقین دہانیاں کروائی گئی ہیں جس سے ملکی کرکٹ کو فائدہ ہو گا۔

انھوں نے سپاٹ فکسنگ کے جرم میں سزا یافتہ فاسٹ بولر محمد عامر کے بارے میں کہا کہ انھوں نے یہ مسئلہ آئی سی سی کے سامنے اٹھایا جنھوں نے قانون میں ترمیم کے لیے ایک نئی کمیٹی بنائی ہے جو جون میں محمد عامر کے کیس پر نظرِ ثانی کرے گی۔ انھوں نے کہا کہ امید ہے کہ عامر کی سزا پانچ سال سے کم ہو کر چار سال ہو جائے گی۔

واضح رہے کہ 2010 میں دورۂ برطانیہ کے موقعے پر پاکستان کے تین کھلاڑیوں محمد عامر، محمد آصف اور سلمان بٹ پر سپاٹ فکسنگ کے الزام کے بعد پانچ پانچ سال پابندی کی سزائیں سنائی گئی تھیں۔ یہ سزائیں 2015 میں ختم ہوں گی۔ اگر جون میں محمد عامر کی سزا ایک سال کم کر کے چار سال ہو گئی تو وہ اس کے بعد فوری طور پر کرکٹ کھیل سکیں گے۔

نجم سیٹھی نے یہ بھی کہا کہ اگلے سال پاکستان آئی سی سی کا صدر نامزد کرے گا۔

انھوں نے کہا کہ آئی سی سی کے اجلاس کے موقعے پر انھوں نے اگلے آٹھ سال کے لیے پاکستان کے اندرونی اور بیرونی دورے طے کر لیے ہیں جن سے پاکستان کو 30 ارب روپے کی آمدن ہو گی۔ انھوں نے کہا کہ بھارت کے ساتھ بھی دورے کے تحریری معاہدے پر دستخط ہو گئے ہیں اور اب صرف بھارتی بورڈ کی منظوری کا انتظار ہے۔

انھوں نے صحافیوں کو بتایا کہ بگ تھری کے منصوبے پر دستخط نہ کرنے سے پاکستان اکیلا رہ گیا تھا، اور اس تنہائی کو ختم کرنے کے لیے سب کے ساتھ ملنا ضروری تھا۔

اسی بارے میں