سری لنکا کی 81 رن سے شکست

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption کرس جارڈن نے بلے اور گیند دونوں ہی سے بہترین کھیل پیش کیا

انگلینڈ اور سری لنکا کے درمیان پہلے ایک روزہ کرکٹ میچ میں انگلینڈ کی ٹیم نے اپنی جارحانہ بلے بازی اور خطرناک بولنگ سے سری لنکا کی ٹیم کو 81رن سے شکست دے دی۔

لندن میں اوول کے میدان پر کھیلے جانے والا یہ میچ بارش کی وجہ سے دو بار متاثر ہوا اور اس کو 32 اووروں تک محدود کر دیا گیا تھا۔

انگلینڈ ٹیم کے آل راؤنڈر کرس جارڈن نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے 38 قیمتی رنز بنائے اور جب بولنگ کا موقع آیا تو انھوں نے سری لنکا کے بلے بازوں کے لیے شاٹس کھیلنے دشوار کردیا اور تین وکٹیں حاصل کئیں۔

مین آف دی میچ کا ایوارڈ حاصل کرنے کے بعد کرس جارڈن نے بی بی سی کو بتایا کہ ’وہ تیزی سے سکور کرنے کے لیے آئے تھے اور وہ انھوں نے کر دیا۔‘

انھوں نے مزید کہا کہ ’ہم چاہتے تھے کہ زیادہ سے زیادہ رن بنائیں کیونکہ ہمیں پتا تھا کہ سری لنکا کی بیٹنگ بہت اچھی ہے۔‘

میزبان انگلینڈ کی ٹیم ٹاس ہار گئی تھی اور سری لنکا کی طرف سے اسے پہلے بیٹنگ کی دعوت دی گئی۔

انگلینڈ کی ٹیم کو جلد ہی نقصان اٹھانا پڑا جب ان کے کپتان الیسٹر کک آؤٹ ہو گئے لیکن اس کے ایئن بیل نے اپنی 31ویں نصف سنچری سکور کی۔ اس کے بعد میچ کو بارش نے آ لیا اور میچ اڑھائی گھنٹے تک رکا رہا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption بارش کی وجہ سے میچ دو مرتبہ روکنا پڑا

کھیل دوبارہ شروع ہونے کے بعد بیلنس نے 64 رن سکور کیے۔ لیکن آخری میں جارڈن نے 13 گیندوں پر پانچ چوکوں اور دو چھکوں کی مدد سے 38 رنز بنائے۔ انگلینڈ نے آخری چار اوور میں 60 رن سکور کیے۔

سری لنکا کی ٹیم شروع ہی سے مشکلات کا شکار ہو گئی جب پہلے ہی اوور میں لاہیرو تھرمانے کی وکٹ گر گئی اور آٹھ سکور پر کمار سنگاکارا آؤٹ ہو گئے۔

کھیل بارش کی وجہ سے دوسری بار رکنے کے بعد جب شروع ہوا تو سری لنکا کو 32 اوور میں 226 رنز بنانے کا ہدف دیا گیا۔

سری لنکا کی طرف سے مہیلا جے وردھنے نے 35 رنز بنائے لیکن ان کے آؤٹ ہونے کے بعد سری لنکن ٹیم کی اننگز بکھر گئی اور 144 کے مجموعی سکور پر پوری ٹیم ڈھیر ہو گئی۔

اسی بارے میں