کرسٹیانو رونالڈو کی ورلڈ کپ میں شرکت مشکوک

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption پرتگال کا پہلا میچ صرف نو دن بعد جرمنی کے خلاف ہے

پرتگال کی فٹبال انتظامیہ نے بدھ کے روز اعلان کیا تھا کہ کرسچیانو رونالڈو زخمی ہیں جس کے بعد 29 سالہ پرتگالی سٹرائیکر میکسیکو کے خلاف وارم اپ میچ میں شریک نہیں ہوسکے۔

رونالڈو کی گھٹنے کی چوٹ نے انھیں گزشتہ ہفتے یونان کے خلاف ہونے والے میچ میں بھی شرکت نہیں کرنے دی۔ پرتگالی فٹبال انتظامیہ کے مطابق رونالڈو کے لیے خاص طور پر الگ قسم کے ٹریننگ سیشن کا انتظام کیا گیا ہے۔

فیفا کی طرف سے سال کے بہترین کھلاڑی کا اعزاز حاصل کرنے والے رونالڈو کوگزشتہ سیزن سے معمولی فٹنس مسائل کا سامنا رہا ہے۔ تاہم ان مسائل کے باوجود رونالڈو نے اپنے کلب ریال میڈرڈ کی طرف سے چیمپیئنز لیگ کے فائنل میں گول کر کے اپنی ٹیم کو فتح دلوائی۔

بی بی سی کے صحت اور سائنس کے نامہ نگار جیمس گیلیگر نےاس بارے میں بتایا کہ انسانی جسم میں ٹینڈین پٹھوں کو ہڈیوں سے جورتا ہے اور یہی ٹینڈن کھیلوں میں کھلاڑیوں کے زخمی ہونے کی عام وجہ ہے۔ گیلیگر نے بتایا کہ اس زخم کا واحد علاج آرام ہے۔

ورلڈ کپ میں پرتگالی ٹیم کی کارکردگی کا دارومدار بڑی حد تک کرسٹیانو رونالڈو پر ہے۔اس بات کا اندازہ رونالڈو کی ورلڈکپ کوالیفائینگ راؤنڈ میں سوئیڈن کے خلاف میچ سے بھی لگایا جاسکتا ہے جس میں انھوں نے اکیلے پرتگال کو فتح دلوائی جس کی بنیاد پر پرتگال ورلڈ کپ کھیلنے کا اہل ہوا۔ اس کے علاوہ رونالڈو کی پچھلے سیزن میں ریال میڈرڈ کی طرف سے کھیلتے ہوئے کارکردگی بھی بہت اچھی رہی ہے۔ اس سیزن میں انھوں نے 55 گول کیے ہیں۔

یاد رہے کہ پرتگال کا پہلا میچ صرف نو دن بعد جرمنی کے خلاف ہے اور پرتگال کے گروپ میں جرمنی کے علاوہ گھانا اور امریکہ کی ٹیمیں شامل ہیں۔

وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ رونالڈو کے ورلڈکپ کھیلنے کی بارے میں شکوک میں بھی اضافہ ہو رہا ہے اور ان کا نہ کھیلنا نہ صرف پرتگال کے لیے بلکہ ان کے مداحوں کے لیے بھی ایک بہت بڑا دھچکا ہوگا۔

اسی بارے میں