برازیل: رنگا رنگ تقریب میں ورلڈ کپ کا آغاز

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption گلوکارہ جینیفر لوپیز اور پٹ بل نے ورلڈ کپ کا آفیشل گانا ’وی آر ون‘ پیش کیا

برازیل کے شہر ساؤ پاؤلو میں جمعرات کو منعقد ہونے والی ایک رنگا رنگ تقریب کے ساتھ فٹبال کے 20ویں عالمی کپ کا آغاز ہوگیا۔

افتتاحی تقریب کے بعد ٹورنامنٹ کا پہلا میچ میزبان برازیل اور کروئیشیا کی ٹیموں کے مابین میچ کھیلا گیا جس میں میزبان ٹیم نے فتح حاصل کی ہے۔

ورلڈ کپ کا رنگا رنگ افتتاح، تصاویر

فٹبال ورلڈ کپ 2014 پر خصوصی ضمیمہ

ورلڈ کپ کی آٹھ انوکھی چیزیں

افتتاحی تقریب ایرینا ڈی ساؤ پاؤلو میں صرف پچیس منٹ جاری رہی جس میں کوئی تقریر نہیں کی گئی۔

اس تقریب میں 660 رقاصوں نے ملک کی عوام، قدرتی ماحول اور فٹبال کے کھیل کو خراجِ تحسین پیش کیا۔

رقاصوں اور رقاصاؤں نے درختوں اور پھولوں کی شکل کے لباس پہن رکھے تھے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption 660 رقاصوں نے ملک کی عوام، قدرتی ماحول اور فٹبال کے کھیل کو خراجِ تحسین پیش کیا

تقریب کے آخری میں گلوکارہ جینیفر لوپیز اور پٹ بل نے ورلڈ کپ کا آفیشل گانا ’وی آر ون‘ پیش کیا اور اسی پر تقریب کا اختتام ہوا۔

افتتاح کے موقع پر جہاں بہت سے شائقین نے ناچ گا کر ساؤپاؤلو کی سڑکوں پر جشن منایا وہیں ان مقابلوں پر آنے والے اخراجات سے ناراض عوام نے مظاہرے بھی کیے۔

مقامی پولیس نے درجنوں افراد پر مشتمل مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے آنسو گیس استعمال کی۔

افتتاحی تقریب کے لیے سٹیڈیم میں 65 ہزار افراد جمع ہوئے اور تقریب کے دوران آواز کی کوالٹی کی خرابی کی وجہ سے شائقین کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔

برازیل میں چار سال تک ان مقابلوں کی تیاریوں کے دوران دنیا کی زیادہ تر توجہ ورلڈ کپ پر آنے والے اخراجات کے خلاف عوامی مظاہروں اور جھڑپوں پر مرکوز رہی۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption رقاصوں اور رقاصاؤں نے درختوں اور پھولوں کی شکل کے لباس پہن رکھے تھے۔

تاہم اب ایک ماہ تک اس توجہ کا مرکز فٹبال کے برازیلی میدان ہوں گے جہاں دنیا کے 32 ممالک کی ٹیمیں دنیائے کھیل کے مقبول ترین ٹورنامنٹ کے 20ویں ایڈیشن کو جیتنے کے لیے کوشاں ہوگی۔

ان ٹیموں کو آٹھ گروپوں میں تقسیم کیا گیا ہے جو برازیل کے بارہ مقامات پر دو ہفتے تک چلنے والے ابتدائی راؤنڈ میں شرکت کریں گی۔

ہر گروپ سے ابتدائی دو نمبروں پر رہنے والی ٹیمیں ناک آؤٹ مرحلے میں جائیں گی جہاں وہ 13 جولائی کو ریو ڈی جنیرو کے ماراکانا سٹیڈیم میں کھیلے جانے والے فائنل میں شرکت کے لیے کوشاں ہوں گی۔

سپین ان مقابلوں میں اپنے اعزاز کا دفاع کر رہا ہے جبکہ برازیل، ارجنٹائن، اور جرمنی وہ دیگر ٹیمیں ہیں جنھیں یہ ورلڈ کپ جیتنے کے لیے فیورٹ قرار دیا جا رہا ہے۔

.

اسی بارے میں