کراچی حملے کے بعد باہر کی کرکٹ ٹیموں کا آنا مشکوک

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption پاکستان نے گذشتہ سال بنگلہ دیش کے انکار کے بعد آئرلینڈ کو دورے کی دعوت دی تھی

آئرلینڈ کی کرکٹ ٹیم کے ممکنہ دورۂ پاکستان کو کراچی ایئرپورٹ پر ہونے والی دہشت گردی کی کارروائی سے زبردست دھچکا پہنچا ہے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کئی ماہ سے آئرلینڈ کی کرکٹ ٹیم کو پاکستان لانے کی کوششوں میں مصروف تھا۔

آئرلینڈ کے کرکٹ حکام نے سکیورٹی کی یقین دہانی ملنے کی صورت میں اس سال ستمبر میں تین ون ڈے انٹرنیشنل میچ کھیلنے میں دلچسپی ظاہر کردی تھی لیکن کراچی ایئرپورٹ پر شدت پسندوں کے حملے نے اس دورے کے امکانات فی الحال ختم کر دیے ہیں۔

’پاکستان میں کرکٹ حالات سے مشروط‘

بین الاقوامی کرکٹ بحال کرانے کی کوشش

پاکستان میں کرکٹ اب ’انتہائی مشکل‘

کرکٹ آئرلینڈ کے ترجمان بیری چیمبرز کے مطابق دونوں کرکٹ بورڈوں کے حکام کے درمیان مجوزہ سیریز کے بارے میں تین ہفتے سے بات چیت جاری تھی، جس میں بین الاقوامی کرکٹ کونسل اور دونوں حکومتیں بھی شامل تھیں۔

ان کا کہنا ہے کہ یہ طے پایا تھا کہ سکیورٹی کے ماہرین کی جانب سے یقین دہانی کی صورت میں تین میچ کھیلے جا سکتے ہیں۔ تاہم حالیہ دہشت گردی کے سبب یہ سیریز التوا کا شکار ہوگئی ہے۔

ترجمان کا یہ بھی کہنا ہے کہ آئرلینڈ کی ٹیم آئی سی سی کے مکمل رکن ملکوں کے ساتھ زیادہ سے زیادہ میچ کھیلنا چاہتی ہے اور یقیناً پاکستان کے خلاف میچوں سے اسے ورلڈ کپ کی تیاری میں مدد ملتی۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے ترجمان آغا اکبر نے بی بی سی کو بتایا ہے کہ پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین نجم سیٹھی پاکستان میں انٹرنیشنل کرکٹ کی بحالی کے لیے کوشاں رہے ہیں اور اس ضمن میں ای سی بی کے چیئرمین جائلز کلارک کے ساتھ ملکر وہ آئرلینڈ کی ٹیم کو پاکستان لانا چاہتے تھے تاہم تازہ ترین صورتحال پر کسی کا اختیار نہیں ہے۔

ترجمان کے مطابق یہ بات اہم ہے کہ آئرلینڈ نے پاکستان ٹیم بھیجنے سے انکار نہیں کیا ہے بلکہ پاکستان کرکٹ بورڈ سے کہا ہے کہ جیسے ہی حالات بہتر ہونے کے بارے میں انہیں یقین دہانی کرائی جائے گی آئرلینڈ کی ٹیم پاکستان کا دورہ کرے گی۔

غور طلب بات یہ ہے کہ مارچ2009 میں سری لنکن کرکٹ ٹیم پر لاہور میں ہونے والے دہشت گرد حملے کے بعد سے پاکستان میں بین الاقوامی کرکٹ نہیں کھیلی گئی۔

اس دوران پاکستان کرکٹ بورڈ ہر ممکن کوشش کرتا رہا ہے کہ کسی طرح یہاں بین الاقوامی کرکٹ بحال کروائی جا سکے، لیکن حالیہ دنوں میں ان کوششوں میں کافی تیزی آئی ہے جس کا اندازہ یورپی یونین کے وفد کے پی سی بی ہیڈکوارٹر کے دورے سے بھی لگایا جا سکتا ہے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ نے گذشتہ سال بنگلہ دیش کے انکار کے بعد آئرلینڈ کی کرکٹ ٹیم کو پاکستان کے دورے کی دعوت دی تھی۔

اسی بارے میں