ارجنٹائن اور نائجیریا ناک آؤٹ مرحلے میں، ایران باہر

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption میسی نے اس ورلڈ کپ کے ہر میچ میں گول کیا ہے

ورلڈ کپ 2014 کےگروپ ایف میں پہلے راؤنڈ کے آخری میچوں میں بدھ کو ارجنٹائن نے نائجیریا کو جبکہ بوسنیا نے ایران کو شکست دے دی ہے۔

تاہم شکست کے باوجود نائجیریا کی ٹیم ارجنٹائن کے ہمراہ اگلے راؤنڈ میں پہنچ گئی ہے اور اس گروپ میں ایران اور بوسنیا کا ورلڈ کپ ختم ہوگیا ہے۔

نائجیریا اور ارجنٹائن کا میچ پورٹ الیگرے کے بیرا_ ریو سٹیڈیم میں کھیلا گیا اور جنوبی امریکی ملک کی ٹیم نے یہ میچ دو کے مقابلے میں تین گول سے جیتا۔

اس میچ میں آغاز سے ہی اس میں سنسنی خیز کھیل دیکھنے کو ملا اور پہلے ہاف کے تیسرے ہی منٹ میں ارجنٹائن کے سٹار سٹرائیکر لیونل میسی نے گول کر کے اپنی ٹیم کو برتری دلوا دی۔

یہ نائجیریا کی ٹیم کے خلاف اس ورلڈ کپ میں ہونے والا پہلا گول تھا۔

ارجنٹائن کی ٹیم ابھی اس برتری سے پوری طرح لطف اندوز بھی ہونے نہ پائی تھی کہ اگلے ہی منٹ میں نائجیریا کے احمد موسیٰ نے گول کر کے یہ برتری ختم کر دی۔

ابتدائی چار منٹ میں دو گولوں کے بعد کھیل میں مزید تیزی آئی اور ارجنٹائن کی جانب سے نائجیرین گول پر کئی حملے کیے گئے لیکن یہ کوششیں گول میں تبدیل نہ ہو سکیں۔

تاہم پہلے ہاف کے اضافی وقت میں میسی نے وہ کر دکھایا جس کے لیے وہ دنیا بھر میں معروف ہیں۔ میسی نے نائجیرین ڈی کے باہر ملنے والی فری کک پر ایسی عمدہ شاٹ لگائی کہ نائجیرین کیپر دیکھتے ہی رہ گئے اور ارجنٹنائن کو ایک بار پھر برتری مل گئی۔

یہ میسی کا اس ورلڈ کپ میں چوتھا گول تھا اور اب وہ برازیل کے نیمار کے ہمراہ سب سے زیادہ گول کرنے والے کھلاڑیوں کی فہرست میں سب سے اوپر ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption احمد موسیٰ نے نائجیریا کی جانب سے دونوں گول کیے

پہلے ہاف کے اختتام پر ارجنٹائن کی برتری برقرار تھی لیکن میچ کے دوسرے ہاف کا آغاز بھی پہلے ہاف کی طرح سنسنی خیز ثابت ہوا اور کھیل شروع ہونے کے دومنٹ بعد ہی احمد موسیٰ نے نائجیریا کی جانب سے دوسرا گول کر دیا۔

اس مرتبہ ارجنٹائن نے جوابی گول کرنے میں زیادہ دیر نہیں لگائی اور 50ویں منٹ میں ملنے والے کارنر پر روزو نے گول کر کے اپنی ٹیم کو تیسری بار برتری دلوا دی۔

ارجنٹائن کی یہ برتری میچ کے آخر تک قائم رہی اور یوں اس نے گروپ میں ناقابلِ شکست اور سرِ فہرست رہتے ہوئے پری کوارٹر فائنل مرحلے میں جگہ بنا لی۔

بوسنیا کی پہلی فتح

گروپ ایف کے دوسرے میچ میں ٹورنامنٹ سے پہلے ہی باہر ہو جانے والی بوسنیا کی ٹیم نے سیلواڈور میں ایران کو ایک کے مقابلے میں تین گول سے ہرایا۔

ایران کو اگلے راؤنڈ میں پہنچنے کے لیے یہ میچ جیتنا لازمی تھا لیکن بوسنیا کی ٹیم نے عمدہ کھیل کا مظاہرہ کیا اور ایرانی کھلاڑیوں کو پریشان کیے رکھا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption بوسنیا نے اس ورلڈکپ میں اپنے آخری میچ میں عمدہ کھیل کا مظاہرہ کیا

بوسنیا کی جانب سے میچ کے 23ویں منٹ میں زیکو نے گول کر کے اپنی ٹیم کو برتری دلوائی جو پہلے ہاف کے اختتام تک قائم رہی۔

دوسرے ہاف میں میچ کے 56ویں منٹ میں پزانک نے بوسنیا کے لیے دوسرا گول کر کے ایرانی ٹیم کی مشکلات میں اضافہ کر دیا۔

ایران کی جانب سے جب 82 ویں منٹ میں رضا ہوچنی جہاد نے گول کیا تو ایرانی شائقین میں امید کی ایک لہر دیکھی گئی

تاہم اگلے ہی منٹ میں بوسنیا کے ورساجیوک نے اپنی ٹیم کا تیسرا گول کر کے ایران کے اس ٹورنامنٹ میں آگے جانے کی تمام راہیں مسدود کر دیں۔

اسی بارے میں