ہالینڈ آگے بڑھ گیا، میکسیکو کا ورلڈکپ ختم

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption ویسلے سنائیڈر نے پہلا گول کر کے میکسیکو کی برتری ختم کی

ورلڈ کپ 2014 کے ناک آؤٹ مرحلے میں ہالینڈ نے میکسیکو کو دو ایک سے ہرا کر کواٹر فائنل کے لیے کوالیفائی کر لیا ہے۔ ہالینڈ کی ٹیم میچ کے اختتام سے پانچ منٹ پہلے تک خسارے میں تھی لیکن میچ کے آخری لمحات میں دو گول کر کے فتح حاصل کر لی۔

میچ کا فیصلہ ایک انتہائی متنازع پنلٹی کک پر ہوا جس پر ہالینڈ نےگول کر کے میچ جیت لیا۔ فٹبال کے ماہرین کی رائے میں ہالینڈ کے تجربہ کار کھلاڑی آئین رابن کو پنلٹی ایریا میں گرایا نہیں گیا تھا بلکہ انھوں نے ڈائیو کر کے پنلٹی حاصل کی جس پر میچ کا فیصلہ ہوا۔

اٹلی کے سابق فٹبالر فیبیو کیناوارا نے پنلٹی کے فیصلے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ آئین روبن کی دی گئی پنلٹی کسی طرح بھی ٹھیک نہیں تھی اور میچ ریفری سے غلطی ہوئی ہے۔ انگلینڈ کے سابق کھلاڑی گلین ہاڈل نے پنلٹی کے فیصلے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ آئین روبن کو پنلٹی کی اپیل کرنے پر ییلو کارڈ دکھایا جانا چاہیے تھا۔

تصویر کے کاپی رائٹ AP

پہلے ہاف میں میکسیکو نے عمدہ کھیل پیش کیا لیکن پہلے ہاف کے اختتام تک دونوں ٹیمیں برابری پر تھیں۔ ماہرین کی نظر دونوں ٹیموں کو ایک ایک پنلٹی کک مل سکتی تھی لیکن ریفری نے ایسا نہیں کیا۔

میچ کے دوسرے ہاف کی شروعات میں ہی میکسیکو کے جیوانی سینٹوس نے پہلا گول کر کے ٹیم کو برتری دلا دی جو میچ کے 88ویں منٹ تک برقرار رہی۔

ہالینڈ نےسٹار سٹرائیکر رابن وان پرسی کو میدان سے باہر بلایا لیکن دوسرے تجربہ کار کھلاڑی آئین رابن کو میدان میں رکھا جو مسلسل میکسیکو کے خطرہ بنے ہوئے تھے۔ہالینڈ نے میچ کے 88ویں منٹ میں ویسلے سنائیڈر کےگول کی بدولت میچ میں برابری حاصل کی۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption اوچاوا نے چند یقینی گول بچائے

کھیل کے چار اضافی منٹ کا کھیل جاری تھا جب ہالینڈ کے سٹرائیکر آئین روبن میکسیکو کے گول کی طرف بڑھے اور پنلٹی ایریا میں دفاعی کھلاڑی کے پاؤں سے پاؤں ٹکرانے کے بعد زمین پر گر گئے۔ میچ ریفری نے پنلٹی کک دینے کا اعلان کیا جس پر میکسیکو کے کھلاڑیوں نے شدید احتجاج کیا لیکن میچ ریفری نے اپنا فیصلہ برقرار رکھا۔ ہالینڈ کے یان ڈرک ہنٹیلار نے پنلٹی کک پر گول کر کے ہالینڈ کو فتح دلا دی۔

میکسیکو کے گول کیپر اوچاوا نے ایک بار پھر شاندار کھیل کا مظاہرہ کیا اور کئی یقینی گول بچائے۔اوچاوا ہی برازیل کے راستے کی دیوار بن گئے تھے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

فورٹیلیزا میں کھیلا جانے والا میچ انتہائی گرمی میں کھیلا گیا۔ فیفا کے مطابق میکسیکو اور ہالینڈ کے میچ کے پہلے ہاف کے دوران گراونڈ کے اندر درجہ حرارت 38 ڈگری ریکارڈ کیا گیا ہے۔ ہوا میں نمی کا تناسب 75 فیصد ہے۔سخت گرمی کی وجہ سے ریفری نے ہر آدھے گھنٹے بعد ایک ’کولنگ بریک‘ دیا۔