سخت مقابلے کے بعد جرمنی کوارٹر فائنل میں

Image caption جرمنی کے متبادل کھلاڑی آندرے شولا نے اضافی وقت میں میچ کا پہلا گول کیا

2014 کے فٹبال ورلڈ کپ کے ناک آؤٹ راؤنڈ میں جرمنی نے الجزائر کو ایک دلچسپ اور سخت مقابلے کے بعد ایک کے مقابلے میں دو گول سے شکست دے کر ٹورنامنٹ کی آخری آٹھ ٹیموں میں جگہ بنا لی ہے۔

پورٹو الیگرے میں پیر کی شام کھیلے جانے والے میچ میں عام خیال یہی تھا کہ جرمنی کی ٹیم باآسانی پہلی مرتبہ ورلڈکپ کے دوسرے راؤنڈ میں پہنچنے والی الجزائر کی ٹیم کو قابو کر لے گی تاہم یہ میچ اس ورلڈ کپ کے حیران کن میچوں میں سے ایک ثابت ہوا۔

اس میچ کے پہلے ہاف کی ابتدا میں زیادہ تر کھیل الجزائر کے ہاف میں ہی ہوا اور جرمنی نے مخالف گول پر کئی حملے کیے جو ناکام بنا دیے گئے۔

تاہم دس منٹ کے کھیل کے بعد الجزائر کی ٹیم میں ایک نئی پھرتی دکھائی دی اور سلیمانی اور سوڈانی نے جرمنی کے دفاعی کھلاڑیوں کی غلطیوں سے فائدہ اٹھاتے ہوئے کئی اچھی مووز بنائیں لیکن وہ ان کوششوں کو گول میں نہ بدل سکے۔

17ویں منٹ میں الجزائر کے اسلام سلیمانی نے ہیڈر کے ذریعے گیند جرمن گول میں ڈال تو دی لیکن ریفری نے ان کے آف سائیڈ ہونے کی وجہ سے یہ گول مسترد کر دیا۔

خیال رہے کہ الجزائر کی ٹیم اس ورلڈ کپ میں ہیڈر کے ذریعے سب سے زیادہ گول کرنے والی ٹیم ہے۔

پہلے ہاف کے بقیہ وقت میں بھی تیز اور جارحانہ کھیل دیکھنے کو ملا لیکن دونوں فریق گول کرنے میں ناکام رہے۔

دوسرے ہاف میں کھیل کی تیزی برقرار رہی اور جرمنی کی جانب سے گول کرنے کی متعدد کوششیں الجزائر کیپر رئیس بولہی نے ناکام بنائیں۔

مقررہ وقت میں میچ بغیر کسی گول کے برابر رہنے کے بعد اضافی وقت کے پہلے ہاف کے دوسرے ہی منٹ میں جرمنی کے متبادل کھلاڑی آندرے شولا نے گول کر کے جرمنی کو برتری دلوا دی۔

اضافی وقت کے دوسرے ہاف میں جرمن کھلاڑیوں نے الجزائر کے فارورڈز کو گول کرنے کے بہت کم مواقع دیے جبکہ خود الجزائری گول پر حملوں کا سلسلہ جاری رکھا جس کا نتیجہ میسوت اوزل کےگول کی صورت میں برآمد ہوا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption میسوت اوزل کا گول فیصلہ کن ثابت ہوا

اس گول کے ایک ہی منٹ بعد الجزائر کے جبو نے گول کر کے جرمن برتری کم کر دی۔

برتری کم کرنے کے بعد الجزائر کی ٹیم نے میچ برابر کرنے اور مقابلہ پنلٹی شوٹ آؤٹ تک لے جانے کی بہت کوشش کی لیکن وقت کی قلت کی وجہ سے ناکام رہی اور یوں ورلڈ کپ 2014 میں اس کا سفر ناک آؤٹ راؤنڈ تک ہی محدود رہا۔

الجزائر کے ورلڈ کپ سے اخراج کے بعد اب اس ٹورنامنٹ میں صرف یورپی اور شمالی و جنوبی امریکہ کی ٹیمیں ہی باقی رہ گئی ہیں۔

اب کوارٹر فائنل میں جرمنی کا مقابلہ فرانس سے ہوگا جس نے ناک آؤٹ راؤنڈ میں نائجیریا کو شکست دی ہے۔

خیال رہے کہ جرمنی گزشتہ تین ورلڈکپ مقابلوں کے سیمی فائنل تک رسائی حاصل کر چکی ہے اور ورلڈکپ کی تاریخ میں کوئی بھی ٹیم لگاتار تین سے زیادہ بار سیمی فائنل میں نہیں پہنچ پائی۔

اسی بارے میں