برطانوی ایتھلیٹ محمد فرح دولتِ مشترکہ کھیلوں سے باہر

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption فرح اس سے پہلے اس ماہ گلاسگو ہی میں ہونے والی ڈائمنڈ لیگ میں بھی بیمار ہونے کی وجہ سے شرکت نہیں کر پائے تھے

اولمپکس میں دو زمروں میں سونے کا تمغا حاصل کرنے والے برطانوی ایتھلیٹ محمد فرح زخمی ہونے کے باعث دولتِ مشترکہ کھیلوں سے دستبردار ہوگئے ہیں۔

31 سالہ عالمی چیمپیئن محمد فرح کو برطانیہ میں مو فرح کے نام سے جانا جاتا ہے۔ انھوں نے دو سال قبل لندن میں ہونے والے اولمپکس میں پانچ اور دس ہزار میٹر کی دوڑوں میں سونے کے تمغے حاصل کیے تھے۔

فرح گلاسگو میں ہونے والی کامن ویلتھ گیمز میں انھی دونوں زمروں میں دوڑنے والے تھے۔ تاہم وہ مکمل طور پر فٹ نہیں ہیں اور اب وہ ٹریننگ کیمپ میں رہ کر اگست کے مہینے میں سوئٹزرلینڈ میں ہونے والی یورپین چیمپیئن شپ کی تیاری کریں گے۔

مو فرح کے مطابق کھیلوں میں حصہ نہ لینا ان کے لیے بہت مشکل فیصلہ تھا اور دو ہفتے قبل ہونے والے بیماری ان کے لیے بہت بڑا دھچکہ ثابت ہوئی ہے۔

انھوں نے کہا: ’میری ٹریننگ میں فرق آیا ہے، تاہم مجھے فٹنس کے اس مقام پر پہنچنے کے لیے مزید دو سے تین ہفتے درکار ہوں گے جس مقام پر میں 2012 اور 2013 میں تھا۔ میری بہت تمنا تھی کہ میں ان کھیلوں میں حصہ لوں لیکن یہ کھیل میری پہنچ سے تھوڑا دور ہیں۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ
Image caption فرح امریکہ کے شہر نیو یارک میں ہونے والی میراتھن میں ریس کے درمیان بے ہوش ہو کرگر پڑے تھے

واضح رہے کہ فرح ان کھیلوں سے دستبردار ہونےوالے پہلے ایتھلیٹ نہیں ہوں گے۔ اس سے پہلے جمیکا کے یوہان بلیک نے ہیمسٹرنگ انجری کے باعث اپنی غیر دستیابی سے حکام کو آگاہ کیا تھا جبکہ برطانیہ کی جیسیکا اینس بھی دولتِ مشترکہ کھیلوں میں شرکت نہیں کر پائیں گی۔

فرح اس سے پہلے اس ماہ گلاسگو میں ہی ہونے والی ڈائمنڈ لیگ میں بھی بیمار ہونے کی وجہ سے شرکت نہیں کر پائے تھے۔

بی بی سی سپورٹس کے ایتھلیٹکس کے تجزیہ نگار سٹیو کریم کا کہنا ہے کہ فرح کا کھیلوں میں حصہ نہ لے پانا ان کے اور دولتِ مشترکہ کھیلوں کے لیے افسوس ناک خبر ہے۔

انھوں نے کہا: ’ہمیں پتہ تھا کہ انھیں مشکلات کا سامنا تھا۔ مجھے امید تھی کہ وہ کم از کم دس ہزار میٹر کی دوڑ کے لیے تیار ہو سکیں گے لیکن اب ان کے پاس فٹ ہونے کے لیے اب وقت نہیں رہا۔‘

اسی بارے میں