’فارم بہتر نہ ہوئی تو ٹیم پر بوجھ نہیں بنوں گا‘

تصویر کے کاپی رائٹ AFP GETTY
Image caption گزشتہ برس مصباح الحق نے ون ڈے انٹرنیشنل میچوں میں سب سے زیادہ 1373 رنز بنائے تھے

پاکستانی کرکٹ ٹیم کے کپتان مصباح الحق نے ورلڈ کپ میں شرکت کو اپنی بیٹنگ فارم سے مشروط قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اگر وہ فارم میں واپس نہیں آسکے تو پھر ٹیم پر قطعاً بوجھ نہیں بنیں گے۔

مصباح الحق آسٹریلیا کے خلاف ابوظہبی میں کھیلا گیا تیسرا ون ڈے انٹرنیشنل نہیں کھیلے ۔

ان کے نہ کھیلنے پر کرکٹ کے حلقوں میں مختلف قیاس آرائیاں ہوئیں اور پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیرمین شہریارخان کو یہ بیان دینا پڑا کہ تیسرا ون ڈے نہ کھیلنے کا فیصلہ مصباح الحق کا خود اپنا تھا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption مبصاح الحق کی قیادت میں پاکستانی ٹیم اٹھارہ میں سے گیارہ ون ڈے سیریز جیت چکی ہے

مصباح الحق کا کہنا ہے کہ عالمی کپ میں ان کی شرکت کا بڑا دارومدار ان کی بیٹنگ فارم پر ہوگا۔ فی الحال ان کی توجہ آسٹریلیا کے خلاف ٹیسٹ سیریز پر مرکوز ہے اور وہ اس دوران اپنی بیٹنگ فارم واپس لانے کی کوشش کرینگے لیکن اگر ان سے رنز نہیں ہورہے ہیں تو پھر وہ یہ نہیں کہہ سکتے کہ انہیں کھیلنا چاہیے۔ ان کے نزدیک پاکستان اور پاکستانی ٹیم کی اہمیت زیادہ ہے وہ کسی بھی موقع پر ٹیم پر بوجھ نہیں بننا چاہیں گے۔آپ کسی بھی صورت میں اپنی ٹیم کو مشکل صورتحال سے دوچار نہیں کرسکتے۔

مصباح الحق نے کہا کہ انہوں نے ٹیم منیجمنٹ سے درخواست کی تھی کہ وہ تیسرا میچ نہیں کھیلنا چاہتے کیونکہ ان کی بیٹنگ فارم کی وجہ سے ٹیم بھی متاثر ہورہی تھی لہذا انہوں نے بہتر سمجھا کہ ان کی جگہ کسی دوسرے کھلاڑی کو موقع ملنا چاہیے۔

یاد رہے کہ مصباح الحق کو پاکستان کرکٹ بورڈ نے ورلڈ کپ تک کے لیے کپتان مقرر کررکھا ہے۔

مصباح الحق دو ہزار گیارہ سے ٹیم کے کپتان ہیں اور ان کی قیادت میں پاکستانی ٹیم اٹھارہ میں سے گیارہ ون ڈے سیریز جیت چکی ہے۔ گزشتہ سال مصباح الحق نے ون ڈے انٹرنیشنل میں سب سے زیادہ تیرہ سو تہتر رنز بنائے تھے تاہم اس سال وہ سری لنکا اور آسٹریلیا کے خلاف میچز میں بڑی اننگز کھیلنے میں کامیاب نہیں ہوسکے ہیں۔

سری لنکا کے خلاف پاکستان کو ون ڈے اور ٹیسٹ دونوں سیریز میں شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا جبکہ ان کی قیادت میں پاکستانی ٹیم آسٹریلیا کے خلاف دو ون ڈے ہارگئی جس کے بعد تیسرے میچ میں شاہد آفریدی کو کپتانی دی گئی لیکن وہ بھی آسٹریلیا کو ایک رن کی ڈرامائی جیت سے نہ روک سکے۔

اسی بارے میں