مایوس نہیں ہوں خود پر بھروسہ ہے: مصباح

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption ’جو بھی بولرز دستیاب ہیں ان کے ذریعے پوری ہمت کے ساتھ مقابلہ کیا جائے گا‘

پاکستانی کرکٹ ٹیم کے کپتان مصباح الحق کو یقین ہے کہ وہ آسٹریلیا کے خلاف ٹیسٹ سیریز میں اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کرکے خود کو اس برے وقت سے نکالنے میں کامیاب ہو جائیں گے۔

واضح رہے کہ مصباح الحق سری لنکا کے گذشتہ دورے میں قابل ذکر سکور کرنے میں کامیاب نہیں ہو سکے تھے۔

اس سال انھوں نے چار ٹیسٹ میچوں میں تین نصف سنچریاں سکور کی ہیں جبکہ 10 ون ڈے میچوں میں وہ صرف دو نصف سنچریاں بنا پائے ہیں۔

مصباح الحق نے بی بی سی اردو سروس کو دیے گئے انٹرویو میں کہا کہ دنیا کے ہر بیٹسمین کو اپنے کریئر میں اتار چڑھاؤ کا سامنا کرنا پڑتا ہے اور برے وقت سے نکلنے کا ایک ہی طریقہ ہے کہ آپ مثبت سوچ اختیار کرتے ہوئے کوشش جاری رکھیں کیونکہ ایک ہی اننگز آپ کو پھر سے معمول پر لے آتی ہے۔

مصباح الحق نے کہا کہ وہ رنز نہ ہونے سے مایوس نہیں ہیں البتہ تھوڑی بہت پریشانی ضرور ہوتی ہے اور دباؤ بھی ہوتا ہے لیکن انھوں نے خود پرگھبراہٹ طاری نہیں کر رکھی انھیں خود پر مکمل بھروسہ ہے کہ وہ آسٹریلیا کے خلاف ٹیسٹ سیریز میں مثبت سوچ کے ساتھ کھیلتے ہوئے اپنے اور اپنی ٹیم کے لیے بڑا سکور کرنے میں کامیاب ہو جائیں گے۔

مصباح الحق نے کہا کہ آسٹریلیا کے خلاف ون ڈے سیریز پاکستانی ٹیم ضرور ہاری ہے لیکن انھیں یقین ہے کہ ٹیسٹ سیریز میں وہ اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کرے گی اور ایک بار پھر جیت کی راہ پر آ جائے گی۔

انھوں نے کہا کہ متحدہ عرب امارات میں پاکستانی ٹیم کا ٹیسٹ ریکارڈ اچھا ہے۔ پاکستانی ٹیسٹ ٹیم کی بیٹنگ لائن بھی مستحکم ہے اور آسٹریلیا کی ٹیم بھی ماضی کے مقابلے میں بہت زیادہ تجرب کار نہیں ہے تاہم پاکستانی ٹیم کو سعید اجمل کی کمی شدت سے محسوس ہوگی ان کی غیرموجودگی پاکستانی ٹیم کے لیے ناقابل تلافی نقصان ہے۔

مصباح الحق نے کہا کہ جنید خان، وہاب ریاض اور عمرگل بھی فٹنس مسائل سے دوچار ہونے کے سبب ٹیم میں شامل نہیں ہیں لیکن کھلاڑیوں کے ان فٹ ہونے کے معاملے میں آپ کچھ بھی نہیں کرسکتے۔یہ صورتحال کسی بھی ٹیم کو درپیش ہو سکتی ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption مصباح نے اس سال چار ٹیسٹ میچوں میں تین نصف سنچریاں سکور کی ہیں جبکہ 10 ون ڈے میچوں میں وہ صرف دو نصف سنچریاں بنا پائے

مصباح الحق نے کہا کہ سعید اجمل کے نہ ہونے کے نتیجے میں ذوالفقار بابر اور یاسر شاہ کو اپنی صلاحیتوں کے اظہار کا موقع مل رہا ہے۔

ذوالفقار بابر بھی ویسی ہی کارکردگی کا مظاہرہ کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں جو ماضی میں دوسرے بولرز دکھاتے آئے ہیں جبکہ یاسر شاہ نے ڈومیسٹک کرکٹ میں اچھی بولنگ کر کے ٹیم میں جگہ بنائی ہے ۔

مصباح الحق نے کہا کہ جو بھی بولرز دستیاب ہیں ان کے ذریعے پوری ہمت کے ساتھ مقابلہ کیا جائے گا۔

اسی بارے میں