یونس خان نے نوے برس پرانا ریکارڈ برابر کر دیا

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption یونس خان اس سیریز میں بھرپور فارم میں ہیں

ابوظہبی میں کھیلے جانے والے کرکٹ ٹیسٹ میچ کے پہلے دن پاکستان بلے باز یونس خان نے آسٹریلیا کے خلاف مسلسل تیسری سنچری بنا کر نوے برس پرانا ریکارڈ برابر کر دیا ہے۔

اس سے قبل سنہ 1924-25 میں ایک برطانوی کھلاڑی ہربرٹ سٹکلف نے آسٹریلیا کے خلاف مسلسل تین سنچریاں سکور کی تھیں۔

یونس خان نے پہلے ٹیسٹ کی دونوں اننگز میں سنچریاں سکور کر کے پاکستان کی طرف سے سب سے زیادہ چھبیس سنچریاں بنانے کا اعزاز بھی حاصل کر لیا تھا۔

یونس خان نے اس سے قبل پچیس سنچریاں بنانے کا انضمام الحق کا ریکارڈ برابر کیا تھا۔

لگاتار تین ٹیسٹ سنچریاں بنانے والے وہ چوتھے پاکستانی کھلاڑی بن گئے ہیں جبکہ آسٹریلیا کے خلاف یہ کارنامہ سرانجام دینے والے وہ پہلے پاکستانی بلے باز ہیں۔

یونس سے قبل پاکستان کے لیے مدثر نذر، ظہیر عباس اور محمد یوسف لگاتار تین ٹیسٹ اننگز میں سنچری بنا چکے ہیں۔

آسٹریلیا کے خلاف دوسرے ٹیسٹ میچ کے پہلے دن پاکستان نے اپنی پہلی اننگز میں دو وکٹوں کے نقصان پر 304 رنز بنا لیے ہیں۔

میچ ختم ہونے پر یونس خان 111 اور اظہر علی 101 رنز بنا کر کریز پر موجود تھے۔ اظہر علی کی مجموعی طور پر یہ چھٹی جبکہ آسٹریلیا کے خلاف پہلی سنچری ہے۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

ابوظہبی ٹیسٹ کا پہلا دن: تصاویر

یونس نے اظہر علی کے ساتھ تیسری وکٹ کے لیے 208 رنز سے زیادہ کی شراکت بھی قائم کی ہے۔

پاکستانی کپتان مصباح الحق نے جمعرات کی صبح ٹاس جیت کر پہلے کھیلنے کا فیصلہ کیا تو محمد حفیظ اور احمد شہزاد نے اننگز شروع کی اور 57 رنز کی شراکت قائم کی۔ اس موقع پر نیتھن لیون نے احمد شہزاد کو 35 کے انفرادی سکور پر ایل بی ڈبلیو کر دیا۔

دوسری وکٹ کے لیے حفیظ اور اظہر علی کے درمیان 39 رنز کی شراکت ہوئی جس کا خاتمہ مچل جانسن نے کھانے کے وقفے کے بعد حفیظ کو وکٹوں کے پیچھے کیچ کروا کر کیا۔

پہلے ٹیسٹ میں ناکام رہنے والے محمد حفیظ نے 45 رنز کی اچھی اننگز کھیلی۔

اس میچ کے لیے پاکستان نے دبئی میں پہلا ٹیسٹ میچ جیتنے والی ٹیم ہی میدان میں اتاری ہے جبکہ آسٹریلیا نے ٹیم میں دو تبدیلیاں کی ہیں۔

پہلے ٹیسٹ میں ڈیبیو کرنے والے سٹیو او کیف کے علاوہ اوپنر ایلکس ڈولن ٹیم میں جگہ نہیں بنا سکے اور ان کی جگہ فاسٹ بولر مچل سٹارک اور آل راؤنڈر گلین میکسویل یہ میچ کھیل رہے ہیں۔

پاکستان کو اس دو میچوں کی سیریز میں ایک صفر کی ناقابلِ شکست برتری حاصل ہے۔ دبئی ٹیسٹ میں پاکستان نے آسٹریلیا کو 221 رنز کے بڑے فرق سے شکست دی تھی۔

محمد حفیظ نے پہلے ٹیسٹ کے برعکس عمدہ بلے بازی کا مظاہرہ کیا اس میچ کی خاص بات پاکستان کے تجربہ کار بلے باز یونس خان کی دونوں اننگز میں شاندار سنچریاں تھیں۔

ان سنچریوں کی بدولت جہاں یونس پاکستان کے لیے سب سے زیادہ ٹیسٹ سنچریاں بنانے والے بلے باز بنے وہیں وہ پہلے ایسے پاکستانی کھلاڑی بن گئے جنھوں نے ٹیسٹ کھیلنے والے تمام ملکوں کے خلاف سنچری سکور کی ہے۔

پاکستان اور آسٹریلیا کے درمیان کھیلے گئے آخری 15 میں سے 13 ٹیسٹ میچ آسٹریلیا نے جیتے ہیں۔

پاکستانی ٹیم ان کھلاڑیوں پر مشتمل ہے: مصباح الحق (کپتان)، احمد شہزاد، محمد حفیظ، اظہرعلی، یونس خان، اسد شفیق، سرفراز احمد، ذوالفقار بابر، یاسرشاہ، عمران خان اور راحت علی۔

آسٹریلوی ٹیم میں یہ کھلاڑی شامل ہیں: مائیکل کلارک (کپتان) کرس راجرز، ڈیوڈ وارنر، گلین میکسویل، سٹیو سمتھ، مچل مارش، بریڈ ہیڈن، مچل جانسن، پیٹر سڈل، مچل سٹارک اور نیتھن لیون۔

اسی بارے میں