آسٹریلوی بولنگ مفلوج، یونس اور مصباح کے نئے ریکارڈز

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption مصباح الحق نے بھی کھل کر بیٹنگ کی اور ریورس سوئپ کا خوب استعمال کی

ابوظہبی ٹیسٹ کے دوسرے دن بھی پاکستانی بیٹسمینوں نے آسٹریلوی بولنگ کو سر اٹھانے نہیں دیا۔

یونس خان اور کپتان مصباح الحق کے متعدد نئے ریکارڈز سے مزین بیٹنگ کے نتیجے میں پاکستان نے اپنی پہلی اننگز 570 چھ کھلاڑی آؤٹ پر ڈکلیئر کردی ۔

آسٹریلیا نے دوسرے دن کھیل ختم ہونے پر 22 رنز بنائے تھے لیکن اسے کرس راجرز کی وکٹ عمران خان کے حوالے کرنی پڑگئی تھی۔

آسٹریلوی ٹیم پاکستان کےسکور سے اب بھی548 رنز پیچھے ہے۔

ابوظہبی میں پاکستان کی عمدہ بیٹنگ کی تصاویر

دوسرے دن رنز کی بہتے دریا میں یونس خان اور مصباح الحق نے خوب مزے لوٹے۔

یونس خان نے شاندار بیٹنگ کرتے ہوئے اپنی پانچویں ڈبل سنچری سکور کی اور وہ 213 رنز بناکر آؤٹ ہوئے۔

مصباح الحق نے چھٹی سنچری مکمل کرتے ہوئے 101 رنز بنائے۔

یونس خان نے اس اننگز کےدوران ٹیسٹ کرکٹ میں آٹھ ہزار رنز بھی مکمل کر لیے ۔

وہ یہ سنگ میل عبور کرنے والے دنیا کے 28ویں اور پاکستان کے تیسرے بیٹسمین ہیں۔

مصباح الحق نے پاکستان کی طرف سے ٹیسٹ کرکٹ میں کپتان کی حیثیت سے سب سے زیادہ دو ہزار چار سو آٹھ رنز رنز بنانے کا عمران خان کا ریکارڈ بھی توڑ دیا ۔

یونس خان اور مصباح الحق کے درمیان چوتھی وکٹ کی شراکت میں 181 رنز بنے۔

یہ ان دونوں کی 11ویں سنچری شراکت ہے اس طرح یہ دونوں پاکستان کی طرف سے سب سے زیادہ سنچری شراکتیں قائم کرنے والے بیٹسمین بھی بن گئے ہیں۔

ان سے قبل جاوید میانداد مدثر نذر اور انضمام الحق محمد یوسف نے ٹیسٹ کرکٹ میں 10 10 سنچری شراکتیں قائم کی تھیں۔

پاکستان کی اننگز یونس خان اور اظہرعلی نے304 دو کھلاڑی آؤٹ پر شروع کی تو 28 رنز کے اضافے پر آسٹریلیا کی قسمت جاگ اٹھی جب اظہرعلی نے مچل سٹارک کی لیگ سائیڈ کی گیند پر وارنر کو کیچ دے کر 109 رنز پر وکٹ گنوائی۔

وارنر نے ہیڈن کے ان فٹ ہونے کے سبب وکٹ کیپنگ بھی کی لیکن 125 کے سکور پر یونس خان کو سٹمپڈ کرنے کا موقع بھی ضائع کیا۔ اس سے قبل گلی میں فیلڈنگ کرتے ہوئے انھوں نے یونس خان ہی کا کیچ گرادیا تھا جب وہ ایک 112 پر کھیل رہے تھے۔

یونس خان جیسے بیٹسمین کو اس طرح کے مواقع دینے کا مطلب خود کو شدید مشکل میں ڈالنا ہے۔ آسٹریلوی ٹیم نے اپنی تباہی کا سامان خود پیدا کردیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty images
Image caption سٹیڈیم میں موجود تماشائیوں کی بڑی تعداد یونس خان کی مداح تھی

ابوظہبی کے شیخ زید سٹیڈیم میں جمعے کی چھٹی ہونے کے سبب تماشائیوں کی بڑی تعداد موجود تھی جن میں سے بیشتر یونس خان کے مداح تھے جو ان کے ہر شاٹ پر ان کے نام کے نعرے لگا رہے تھے۔

مصباح الحق نے بھی کھل کر بیٹنگ کی اور ریورس سوئپ کا خوب استعمال کیا۔انھوں نے اپنی سنچری بھی میکسویل کو ریورس سوئپ پر چوکا لگا کر مکمل کی۔

وہ 101 بناکر سٹیو سمتھ کی گیندپر ان ہی کے ہاتھوں کیچ ہوئے۔ان کی اننگز میں 10 چوکے اور ایک چھکا شامل تھا۔

یونس خان 213 کے سکور پر پیٹر سڈل کی گیند پر بولڈ ہوئے تو تماشائیوں کی داد اپنی جگہ لیکن آسٹریلوی کپتان کلارک نے بھی آگے بڑھ کر انھیں شاندار اننگز پر مبارکباد دی۔

اسد شفیق 21 رنز پر سٹارک کی گیند پر بولڈ ہوئے ۔

563 رنز چھ کھلاڑی آؤٹ کے سکور پر کلارک نے نئی گیند لی لیکن تین اوورز بعد ہی مصباح الحق نے اننگز ڈکلیئر کرنے کا فیصلہ کر لیا۔

اسی بارے میں