پاکستان کے دونوں اوپنر پویلین واپس

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption پاکستانی اوپنروں نے نیوزی لینڈ کے فاسٹ بولروں کو اطمینان سے کھیلا لیکن اپنی وکٹیں سپنروں کو تھما گئے

دبئي میں جاری دوسرے ٹیسٹ میچ کے دوسرے دن پاکستان نےاپنی پہلی اننگز میں دو وکٹوں کے نقصان پر 32 رنز بنائے ہیں۔

اس سے قبل نیوزی لینڈ کو پوری ٹیم 403 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی۔

پاکستان کےدونوں اوپنر توفیق عمر اور شان مسعود نیوزی لینڈ کے سپنروں کے ہاتھوں وکٹیں گنوا بیٹھے۔

اس وقت یونس خان اور اظہر علی وکٹ پر موجود ہیں۔

تفصیلی سکور کارڈ سکور

پہلے روز کے اختتام پر لیتھم 137 رنز پر ناٹ آؤٹ تھے جب کہ ان کے ساتھ وکٹ پر کوری اینڈرسن ہیں جنھوں نے سات رنز بنا رکھے ہیں۔

اس سے قبل یاسر شاہ نے تجربہ کار بلے باز راس ٹیلر کی اننگز کا خاتمہ کیا۔ وہ 23 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔

پیر کی صبح نیوزی لینڈ کے کپتان برینڈن مکلم نے ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کرنے کا فیصلہ کیا۔

دبئي میں ہونے والے دوسرے ٹیسٹ میچ کے پہلے دن لنچ کے بعد نیوزی لینڈ کی دوسری وکٹ گر گئی ہے۔ کین ولیم سن ذوالفقار بابر کی ایک عمدہ گیند پر بولڈ ہو گئے۔ انھوں نے 32 رنز بنائے تھے۔

نیوزی لینڈ کے کپتان برینڈن مکلم نے ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کرنے کا فیصلہ کیا، جس کے بعد انھوں نے ٹام لیتھم کے ساتھ اپنی ٹیم کو عمدہ آغاز فراہم کیا۔

واضح رہے کہ پاکستان نے پہلا میچ جیت کر سیریز میں ایک صفر کی برتری حاصل کر رکھی ہے۔

نیوزی لینڈ کی ٹیم انھی کھلاڑیوں پر مشتمل ہے جنھوں نے ابو ظہبی میں کھیلے جانے والے پہلے ٹیسٹ میں ملک کی نمائندگی کی تھی یعنی ٹیم میں کوئی تبد یلی نہیں کی گئی ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption ٹاس کے بعد پاکستان کے کپتان نے کہا ہے کہ ’یہاں شروع میں گیند قدرے سوئنگ کرتی ہے اس لیے بیٹنگ کرنا آسان نہیں ہوگا‘

جبکہ پاکستان کی جانب سے تین تبدیلیاں کی گئی ہیں۔ احمد شہزاد کے سر میں چوٹ کی وجہ سے ان کی جگہ توفیق عمر نے ٹیم میں واپسی کی ہے جبکہ دوسرے اوپنر محمد حفیظ بھی ہیم سٹرنگ کی تکلیف میں مبتلا ہیں اور ان کی جگہ شان مسعود کو ٹیم میں شامل کیا گیا ہے۔

تیز بولر عمران خان کی جگہ احسان عادل نے لی ہے۔

ٹاس کے بعد پاکستان کے کپتان نے کہا ہے کہ ’یہاں شروع شروع میں گیند قدرے سوئنگ کرتی ہے اس لیے بیٹنگ کرنا آسان نہیں ہوگا۔‘ لہٰذا انھوں نے ٹاس ہار جانے پر اطمینان کا اظہار کیا ہے۔

پاکستانی ٹیم: شان مسعود، توفیق عمر، اظہر علی، یونس خان، مصباح الحق، اسد شفیق، سرفراز احمد، یاسر شاہ، ذولفقار بابر، احسان عادل اور راحت علی۔

نیوزی لینڈ کی ٹیم: برینڈن میک کلم، ٹام لیتھم، کین ولیم سن، راس ٹیلر، کوری اینڈرسن، جیمز نیشم، بی جے واٹلنگ، مارک کریگ، ٹم ساؤدی، ایش سودھی اور ٹرینٹ بولٹ۔

اسی بارے میں