شارجہ ٹیسٹ: پہلا دن پاکستانی بلے بازوں کے نام

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption پاکستان کی جانب سے محمد حفیظ نے 23 چوکوں اور تین چھکوں کی مدد سے 178 رنز بنائے

شارجہ میں کھیلے جانے والے تیسرے ٹیسٹ میچ کے پہلے دن کھیل کے اختتام پر پاکسستان نے نیوزی لینڈ کے خلاف پہلی اننگز میں تین وکٹوں کے نقصان پر 281 رنز بنائے ہیں۔

پہلے دن کے اختتام پر محمد حفیظ اور مصباح الحق کریز پر موجود تھے اور دونوں نے بالترتیب 178 اور 38 رنز بنائے تھے۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

حفیظ نے اس دوران ٹیسٹ کرکٹ میں اپنی ساتویں سنچری بھی مکمل کی۔ یہ اس سیریز میں ان کی دوسری سنچری ہے۔

نیوزی لینڈ کی جانب سے مارک کریگ نے دو جبکہ ڈینیئل ویٹوری نے ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

پاکستان کی جانب سے شان مسعود اور محمد حفیظ نے اننگز شروع کی اور 43 رنز کی شراکت قائم کی۔

اس موقع پر مارک کریگ نے شان مسعود کو بولڈ کر کے اپنی ٹیم کو پہلی کامیابی دلوائی۔

دوسری وکٹ کے لیے محمد حفیظ اور اظہر علی کے درمیان 87 رنز کی شراکت ہوئی جس کا خاتمہ بھی مارک کریگ نے اظہر علی کو راس ٹیلر کے ہاتھوں کیچ کروا کے کیا جو 39 رنز بنا سکے۔

ان فارم یونس خان اس اننگز میں صرف پانچ رنز ہی بنا سکے اور ڈینیئل ویٹوری کی وکٹ بنے۔

یونس نے ایل بی ڈبلیو آؤٹ دیے جانے پر ریویو بھی لیا لیکن گیند بالکل وکٹ کے سامنے ان کی ٹانگ پر لگی تھی اور اس لیے انھیں پویلین لوٹنا پڑا۔

شارجہ میں کھیلنے جانے والے اس میچ میں پاکستانی کپتان مصباح الحق نے ٹاس جیت کر پہلے کھیلنے کا فیصلہ کیا۔

اس میچ کے لیے پاکستانی ٹیم میں دو تبدیلیاں کی گئی ہیں اور پہلے ٹیسٹ میں ان فٹ ہونے والے آل راؤنڈر محمد حفیظ کی ٹیم میں اوپنر توفیق عمر کی جگہ واپسی ہوئی ہے جبکہ احسان عادل کی جگہ فاسٹ بولر محمد طلحہ کو ملی ہے۔

نیوزی لینڈ نے اس ٹیسٹ کے لیے اپنی ٹیم میں تین سپنر کھلائے ہیں اور تجربہ کار آف سپنر ڈینیئل ویٹوری ڈھائی سال کے وقفے کے بعد ٹیسٹ میچ میں اپنے ملک کی نمائندگی کر رہے ہیں۔

انھیں نیشم کی جگہ ٹیم میں شامل کیا گیا ہے۔

پاکستان کو اس ٹیسٹ سیریز میں ایک صفر کی ناقابلِ شکست برتری حاصل ہے۔

ابوظہبی میں سیریز کا پہلا ٹیسٹ میچ پاکستان نے 248 رنز سے جیتا تھا جبکہ دبئی میں کھیلا گیا دوسرا میچ دلچسپ اور سنسنی خیز مقابلے کے بعد بےنتیجہ رہا تھا۔

اسی بارے میں