آسٹریلوی ٹیل اینڈرز نے ٹیم کو برتری دلوا دی

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption سٹیو سمتھ نے بطور کپتان اپنے پہلے ہی ٹیسٹ میں سنچری بنائی

برزبین میں کھیلے جانے والے دوسرے کرکٹ ٹیسٹ میچ کے تیسرے دن کھیل کے اختتام پر بھارت نے آسٹریلیا کے خلاف اپنی دوسری اننگز میں ایک وکٹ کے نقصان پر 71 رنز بنا لیے ہیں۔

مہمان ٹیم کو آسٹریلیا کی پہلی اننگز کی برتری ختم کرنے کے لیے مزید 26 رنز درکار ہیں جبکہ اس کی نو وکٹیں باقی ہیں۔

جب کھیل ختم ہوا تو اس وقت کریز پر چیتیشور پجارا اور شیکھر دھوون موجود تھے۔

میچ کا سکور کارڈ

بھارت کو دوسری اننگز میں واحد نقصان مرلی وجے کی وکٹ کی صورت میں اٹھانا پڑا۔

پہلی اننگز میں سنچری بنانے والے مرلی وجے اس اننگز میں 28 رنز ہی بنا سکے اور سٹارک کی وکٹ بنے۔

اس سے قبل آسٹریلیا کی پوری ٹیم اپنی پہلی اننگز میں 505 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی۔

آسٹریلیا کے لیے جہاں سٹیو سمتھ نے بطور کپتان اپنے پہلے ہی ٹیسٹ میں سنچری بنائی وہیں ٹیل اینڈرز میں مچل جانسن اور مچل سٹارک نے نصف سنچریاں بنا کر ٹیم کو برتری دلوانے میں کلیدی کردار ادا کیا۔

میزبان ٹیم نے جمعے کو چار وکٹوں پر 221 رنز سے اننگز دوبارہ شروع کی تو سکور میں 11 رنز کے اضافے کے بعد اسے پانچواں نقصان مچل مارش کی وکٹ کی صورت میں اٹھانا پڑا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption مچل جانسن نے کپتان سمتھ کے ساتھ مل کر ٹیم کو مشکلات سے نکالا

بریڈ ہیڈن بھی زیادہ دیر وکٹ پر نہ ٹھہر سکے اور جب وہ آؤٹ ہوئے اور آسٹریلیا کا سکور 247 رنز تھا۔

تاہم اس موقع پر مچل جانسن نے کپتان سمتھ کے ساتھ مل کر ٹیم کو مشکلات سے نکالا اور ساتویں وکٹ کے لیے 148 رنز کی شراکت قائم کی۔

تاہم اس شراکت کے بعد پہلے جانسن اور پھر تین رن بعد سمتھ پویلین لوٹ گئے۔

سمتھ نے 13 چوکوں اور دو چھکوں کی مدد سے 133 رنز کی اننگز کھیلی جبکہ جانسن نے 88 رنز بنائے۔

ان کے آؤٹ ہونے کے بعد مچل سٹارک نے پہلے نیتھن لیئون اور پھر اپنا پہلا ٹیسٹ کھیلنے والے جوش ہیزل وڈ کے ساتھ مل کر بھارتی بولرز کا جم کر مقابلہ کیا اور نہ صرف بھارتی برتری ختم کی بلکہ ٹیم کو 97 رنز کی برتری بھی دلوا دی۔

اس میچ میں بھارتی ٹیم نے اوپنر مرلی وجے کی سنچری اور مڈل آرڈر میں اجنکیا ریہانے کی ذمہ دارانہ اننگز کی بدولت اپنی پہلی اننگز میں 408 رنز بنائے تھے۔

ٹیسٹ سیریز میں آسٹریلیا کو ایک صفر کی سبقت حاصل ہے۔

اسی بارے میں