جوہانزبرگ میں ویسٹ انڈیز کی ریکارڈ ساز کامیابی

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption کرس گیل کو ان کی آتشی بلے بازی کے لیے مین آف دا میچ کے اعزاز سے لگاتار دوسری بار نوازا گیا

جوہانزبرگ میں کھیلے جانے والے سیریز کے دوسرے ٹی ٹوئنٹی میچ میں ویسٹ انڈیز نے جنوبی افریقہ کے خلاف ریکارڈ ساز کامیابی کے ساتھ سریز میں دو صفر کی سبقت حاصل کر لی ہے۔

ٹی ٹوئنٹی کی تاریخ میں اتنے بڑے ہدف کو ابھی تک عبور نہیں کیا جا سکا تھا۔

اوپنر بیٹس مین کرس گیل کی طوفانی بیٹنگ کی بدولت ویسٹ انڈیز نے یہ کارنامہ انجام دیا ہے۔

جنوبی افریقہ نے پہلے کھیلتے ہوئے سات وکٹوں کے نقصان پر 231 رنز کا بڑا ہدف رکھا۔ فاف دو پلیسی نے 56 گیندوں پر 11 چوکوں اور پانچ چھکوں کی مدد سے 119 رنز بنائے جبکہ ڈیوڈ ملر نے 26 گیندوں پر 47 رنز بنائے۔

اس کے جواب میں کرس گیل نے صرف 41 گیندوں پر نو چوکوں اور سات چھکوں کی مدد سے 90 رنز بنا کر ہدف کو آسان بنا دیا جبکہ ان کے ساتھ میرلن سیموئلز نے 39 گیندوں پر 60 رنز کی عمدہ اننگز کھیلی۔

کپتان ڈیرن سیمی اور رام دین نے مطلوبہ رنز با آسانی بنا لیے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption فاف دو پلیسی مسلسل رنز بنا رہے ہیں

ویسٹ انڈیز نے چھ وکٹ کے نقصان پر چار گیند پہلے ہی مطلوبہ رنز حاصل کرکے ایک نیا ریکارڈ قائم کیا کیونکہ اس سے قبل کوئی بھی ٹیم ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میں اتنے بڑے سکور کو کامیابی کے ساتھ عبور کرنے میں ابھی تک ناکام رہی تھی۔

اس سے قبل کیپ ٹاؤن میں کھیلے جانے والے پہلے ٹی ٹوئنٹی ميچ میں ویسٹ انڈیز نے کرس گیل کے جارحانہ 77 رنز کی بدولت چار وکٹوں سے ہی کامیابی حاصل کی تھی۔

اس میچ میں بھی میرلن سیموئلز نے اچھی کارکردگی دکھائي تھی اور 41 رنز بنائے۔

کرس گیل کو ان کی آتشی بلے بازی کے لیے مین آف دا میچ کے اعزاز سے لگاتار دوسری بار نوازا گیا۔

اسی بارے میں