برازیل کے مشہور سرفر کو پولیس اہلکار نے ہلاک کر دیا

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption ہلاکت کے واقعے کے بارے میں متضاد اطلاعات ملی ہیں

برازیل میں پولیس اہلکار نے ملک کے مشہور سرفر کو اس کے گھر کے باہر گولی مار کر ہلاک کر دیا ہے۔

24 سالہ رِکارڈو ڈس سینٹوس کو ایک پولیس اہلکار اور ایک دوسرے شخص سے تکرار کے بعد گولیاں مار کر ہلاک کیا گیا۔

پولیس اہلکار اس وقت اپنی ڈیوٹی پر نہیں تھا تاہم اس کا کہنا ہے کہ اپنے دفاعی میں یہ قدم اٹھایا۔

رِکارڈو ڈس سینٹوس کو زخمی حالت میں ہپستال منتقل کیا گیا اور وہاں ان کے چار آپریشن کیے گئے لیکن جانبر نہیں ہو سکے۔

رِکارڈو ڈس سینٹوس کو سال 2012 میں اس وقت مقبولیت ملی جب انھوں نے 11 بار سرفنگ کے عالمی چیمپیئن کو شکست دی۔

برازیل کے جنوبی شہر فلوریانوپولس میں پیش آنے والے اس واقعے کے بارے میں متضاد اطلاعات ہیں کہ پولیس اہلکار نے رِکارڈو ڈس سینٹوس پر حملہ کیوں کیا۔

ایک عینی شاہد کے مطابق رِکارڈو ڈس سینٹوس نے اپنے گھر کے باہر ساحل سمندر پر جب دونوں افراد کو اونچی آواز میں موسیقی سننے اور منشیات استعمال کرتے دیکھا تو انھیں وہاں سے جانے کا کہا۔

ایک اور اطلاع کے مطابق رِکارڈو ڈس سینٹوس کو اس وقت گولی مار گئی جب وہ ان افراد سے اپنے مکان کی حدود میں گاڑی کھڑی کرنے پر بات کر رہے تھے۔

پولیس افسر پر ابھی الزام عائد نہیں کیا گیا اور ان کا کہنا ہےکہ اپنے دفاع میں یہ قدم اٹھایا۔