رونکی اور ایلیئٹ کی شاندار بلے بازی، نیوزی لینڈ فاتح

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption ایلیئٹ اور رونکی نے چھٹی وکٹ کے لیے 267 رنز کی ناقابلِ شکست شراکت قائم کی

نیوزی لینڈ نے ڈیونیڈن میں کھیلے جانے والے پانچویں ایک روزہ کرکٹ میچ میں سری لنکا کو 108 رنز سے شکست دے دی ہے۔

جمعے کو کھیلے گئے میچ میں نیوزی لینڈ نےگرانٹ ایلیئٹ اور وکٹ کیپر لیوک رونکی کی شاندار سنچریوں کی بدولت پانچ وکٹوں کے نقصان پر 360 رنز بنائے۔

اس ہدف کے تعاقب میں سری لنکن ٹیم 44ویں اوور میں 252 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی۔

یونیورسٹی اوول میں کھیلے گئے میچ میں نیوزی لینڈ کا آغاز بھی اچھا نہ تھا اور اسے میچ کی پہلی ہی گیند پر مارٹن گپٹل کی وکٹ کی صورت میں پہلا نقصان اٹھانا پڑا۔

اس کے بعد بھی وقفے وقفے سے وکٹیں گرنے کا سلسلہ جاری رہا اور 18ویں اوور میں 93 کے مجموعی سکور پر نیوزی لینڈ کی آدھی ٹیم پویلین لوٹ چکی تھی۔

اس موقع پر ایسا لگتا تھا کہ میزبان ٹیم بڑا سکور کرنے میں ناکام رہے گی تاہم ایلیئٹ اور رونکی نے چھٹی وکٹ کے لیے 267 رنز کی ریکارڈ اور ناقابلِ شکست شراکت قائم کر کے صورت حال تبدیل کر دی۔

اس شراکت کے دوران ایلیئٹ نے 96 گیندوں پر سات چوکوں اور دو چھکوں کی مدد سے 104 رنز بنائے جبکہ رونکی نے جارحانہ انداز میں کھیلتے ہوئے 170 رنز بنانے کے لیے صرف 99 گیندیں استعمال کیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption دلشان نے 116 رنز کی اننگز کھیلی لیکن اپنی ٹیم کو فتح نہ دلوا سکے

رونکی کی اننگز میں 14 چوکے اور نو چھکے شامل تھے۔

361 رنز کے ہدف کے تعاقب میں سری لنکا کی جانب سے اوپنرز تھریمانے اور تلکارتنے دلشان کے علاوہ کوئی بھی بلے باز جم کر نہ کھیل سکا۔

دلشان نے 116 رنز کی اننگز کھیلی جبکہ تھریمانے نے 45 رنز بنائے۔

ان دونوں نے پہلی وکٹ کے لیے 93 رنز کی شراکت قائم کی لیکن بعد میں آنے والے بلے باز اس اچھے آغاز سے فائدہ اٹھانے میں ناکام رہے۔

نیوزی لینڈ کی جانب سے ٹرینٹ بولٹ چار وکٹوں کے ساتھ سب سے کامیاب بولر رہے جبکہ ساؤدی، میلنگن اور ایلیئٹ نے دو، دو وکٹیں لیں۔

گرانٹ ایلیئٹ اور لیوک رونکی کو مشترکہ طور پر میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔

اس فتح کے نتیجے میں میزبان ٹیم کو سات میچوں کی سیریز میں تین ایک کی ناقابلِ شکست برتری حاصل ہوگئی ہے۔

سات میچوں کی اس سیریز کا پہلا اور چوتھا میچ نیوزی لینڈ جبکہ دوسرا سری لنکا نے جیتا تھا جبکہ تیسرا میچ بارش کی وجہ سے منسوخ کر دیا گیا تھا۔

اسی بارے میں