’کرسٹیانو رونالڈو کی خدمات 30 کروڑ پاؤنڈ میں‘

تصویر کے کاپی رائٹ EPA
Image caption خورخے مینڈس کرسٹیاو رونالڈو کے مینیجر ہیں

پرتگالی فٹبال کھلاڑی کرسٹیانو رونالڈو کے ایجنٹ کا کہنا ہے کہ اُن کی خدمات کی کُل قیمت 30 کروڑ پاؤنڈ ہے۔

کرسٹیانو رونالڈو کے ایجنٹ خورخے مینڈس نے بی بی سی سپورٹس کو بتایا کہ رونالڈو کو اگر کل ریال میڈرڈ جانے دے تو انھیں 30 کروڑ پاؤنڈ میں خریدا جا سکتا ہے۔

خورخے مینڈس نے بی بی سی کے سپورٹس ایڈیٹر ڈین روون سے بات کرتے ہوئے کہا کہ پرتگالی فٹبال ٹیم کے کپتان ’اب تک کے بہترین کھلاڑی ہیں۔ وہ دنیا کے بہترین کھلاڑی ہیں اور آپ اُن کا مقابلہ کسی اور کے ساتھ نہیں کر سکتے۔‘

29 سالہ رونالڈو کو اس سال مسلسل تیسری بار دنیا کے بہترین کھلاڑی کا ایوارڈ ملا جس میں انھوں نے لائنل میسی کو پیچھے چھوڑ دیا۔

جب اُن سے پوچھا گیا کہ رونالڈو کی خدمات کتنے میں حاصل کی جاسکتی ہیں تو انھوں نے جواباً پوچھا: ’رونالڈو؟ ایک ارب۔ اگر انھیں خریدنے کی شرط ایک ارب ڈالر کی ہے تو (ان کی مالیت) ایک ارب ہے اور اُن جیسا ڈھونڈنا بہت مشکل ہے۔

’اگر کسی بھی وجہ سے اُن کا کلب انھیں30 کروڑ پاؤنڈ میں بیچنے کا فیصلہ کرتا ہے تو ضرور کوئی نہ کوئی انھیں خریدنے کے لیے تیار ہو گا۔‘

تاہم انھوں نے اصرار کیا کہ رونالڈو، جنھیں 2009 میں ریال میڈرڈ نے آٹھ کروڑ پاؤنڈ میں خریدا تھا، اسی کلب کا حصہ رہیں گے، بے شک انھیں اپنے سابقہ کلب مانچسٹر یونائٹڈ کے شائقین سے محبت ہے۔

جب اُن سے پوچھا گیا کہ کیا وہ اپنا کریئر وہیں ختم کریں گے؟ تو انھوں نے جواب دیا ’یقیناً، وہ ریال میڈرڈ نہیں چھوڑیں گے۔‘

مینڈس کے بارے میں اطلاعات ہیں کہ انھوں نے ایک ارب پاؤنڈ مالیت کے تبادلوں کے معاہدے کروائے ہیں اور انھیں کھیل کی دنیا کی طاقتور ترین شخصیت سمجھا جاتا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption کرسٹیانو رونالڈو مسلسل تین بار بیلون ڈی اور یعنی سال کے بہترین فٹبال کھلاڑی کا ایوارڈ حاصل کر چکے ہیں

انھوں نے کہا: ’ ایجنٹوں کے بارے میں لوگوں کےغلط خیالات ہیں۔ ایجنٹ ہونے کے مختلف معنی ہیں۔ میں ایک نارمل شخص ہوں اور ہر دن سخت محنت کرتا ہوں۔ میرے مقاصد اور اہداف ہیں اور میں ایمانداری سے درست کام کرتا ہوں اور یہ سب سے اہم ہے۔‘

انھوں نے فٹبال کو ’دنیا کا سب سے اہم کھیل‘ قرار دیا اور کھلاڑیوں کے معاوضوں کا دفاع کرتے ہوئے کہا کہ ’معاوضے سب سے زیادہ ہونے چاہییں۔‘

مینڈس نے ان کھلاڑیوں کو اپنا خاندان قرار دیا جن کے وہ معاہدے کرواتے ہیں، اور کہا کہ ’یہ ایسا ہی ہے جیسا آپ اپنے خاندان کے ساتھ اپنے بیٹے سے بات کر رہے ہوں اور ہمیشہ ان کی بہتری کے لیے اور ان کی مدد کے لیے بہترین راستہ تلاش کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔‘

مینڈس نے کھلاڑیوں کی تھرڈ پارٹی ملکیت کے خیال کو کلبوں کے لیے ’غیر قانونی‘ اور ’تباہ کن‘ قرار دیا۔

مینڈس سابق ڈی جے ہیں اور وہ ایک نائٹ کلب کے مالک بھی رہ چکے ہیں۔ وہ ہوزے مریینیو، لوئز فیلیپ سکولاری، ردامِل فلکاؤ، اینخل ڈی ماریا، ہامیز روڈریگس، ڈیوڈ ڈی گیا، وکٹر والڈس اور ڈییگل کوسٹا کی نمائندگی کرتے ہیں۔

اسی بارے میں