وارم اپ میچوں میں نیوزی لینڈ اور زمبابوے فاتح

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption کین ولیمسن نے نصف سنچری بنا کر اپنی ٹیم کو بڑے سکور تک پہنچنے میں مدد دی۔

عالمی کرکٹ کپ کے آغاز سے قبل کھیلے جانے والے وارم اپ میچوں میں نیوزی لینڈ نے جنوبی افریقہ کو جبکہ زمبابوے نے سری لنکا کو شکست دے دی ہے۔

کرائسٹ چرچ میں بدھ کو کھیلے جانے والے میچ میں نیوزی لینڈ نےجنوبی افریقہ کو 134 رنز کے بڑے فرق سے ہرایا۔

اس میچ میں میزبان ٹیم نے پہلے کھیلتے ہوئے مقررہ 50 اوورز میں آٹھ وکٹوں کے نقصان پر 331 رنز بنائے۔

نیوزی لینڈ کے کپتان برینڈن میککلم اور کین ولیمسن نے نصف سنچریاں بنا کر اپنی ٹیم کو اس بڑے سکور تک پہنچنے میں مدد دی۔

اس کے جواب میں جنوبی افریقہ کی ٹیم 45ویں اوور میں 197 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی۔

ایک موقع پر جنوبی افریقہ کے چھ کھلاڑی 62 رنز پر آؤٹ ہو چکے تھے لیکن پھر جے پی ڈومینی نے فیلنڈر کے ساتھ مل کر ساتویں وکٹ کے لیے 121 رنز کی شراکت بنا ڈالی۔

ان دونوں بلے بازوں نے ٹیم کا سکور 183 تک پہنچایا لیکن پھر وکٹیں گرنے کا سلسلہ دوبارہ شروع ہوا اور پوری ٹیم سکور 197 رنز بنا کر پویلین لوٹ گئی۔

نیوزی لینڈ کے لیے ٹرینٹ بولٹ نے 5 وکٹیں لے کر ٹیم کی فتح میں اہم کردار ادا کیا۔

دوسرے میچ میں زمبابوے نے سری لنکا کو سات وکٹوں سے شکست دے کر اپنے گروپ کی ٹیموں کے لیے خطرے کی گھنٹی بجا دی۔

سری لنکا نے اس میچ میں فتح کے لیے زمبابوے کو 280 رنز کا ہدف دیا جو اس نے ہملٹن مساکادزا کی سنچری کی بدولت 45ویں اوور میں باآسانی تین وکٹوں پر حاصل کر لیا۔

زمبابوے کو آغاز میں دو وکٹوں کا نقصان اٹھانا پڑا لیکن پھر مساکادزا نے پہلے برینڈن ٹیلر اور پھر شان ولیمز کے ساتھ مل کر عمدہ بلے بازی کی اور ٹیم کو فتح یاب کروایا۔

مساکادزا نے 117 رنز بنائے اور آؤٹ نہیں ہوئے۔ ان کا ساتھ دینے والے شان ولیمز اور برینڈن ٹیلر نے بھی نصف سنچریاں بنائیں۔

اس سے قبل سری لنکا کی اننگز میں خاص بات کرونارتنے اور جیون مینڈس کی نصف سنچریاں تھیں۔ انھوں نے بالترتیب 58 اور51 رنز کی اننگز کھیلیں۔

خیال رہے کہ ان وارم اپ میچوں کو باقاعدہ ون ڈے یا فرسٹ کلاس میچ کا درجہ حاصل نہیں ہے۔

اسی بارے میں