پی سی بی چیئرمین کا ٹیم مینجمینٹ سے رابطہ، ’پرفارمنس مایوس کن ہے‘

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

پاکستانی کرکٹ ٹیم بھارت اور ویسٹ انڈیز کے خلاف پے در پے دو بڑی ناکامیوں کے بعد پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین نے ٹیم کے کپتان، ٹیم مینیجر اور ہیڈ کوچ سے کہا ہے کہ ٹیم کی کارکردگی مایوس کن ہے اور اس میں بہتری لائے جائے۔

شہریار خان نے پاکستانی ٹیم کے کپتان مصباح الحق، ٹیم مینیجر نوید اکرم چیمہ اور ہیڈ کوچ وقار یونس سے بات کی ہے۔

دن کی روشنی میں پاکستان کی دنیا اندھیر

دوسری جانب ٹیم مینیجمنٹ نے ٹیم کے ساتھ بھی ایک میٹنگ کی ہے جس میں ٹیم کی ناقص کارکردگی پر بات کی گئی ہے۔ مینیجمنٹ نے ٹیم پر زور دیا کہ اگلے میچوں میں بہتر کارکردگی کو یقینی بنائیں۔

یاد رہے کہ ٹیم مینیجمنٹ نے ٹیم کے ساتھ میٹنگ کے لیے پیر کو ہونے والے پریکٹس سیشن کو منسوخ کردیا تھا۔

پاکستانی ٹیم اتوار کی شام کرائسٹ چرچ سے برسبین پہنچی تھی اور پیر کی صبح اسے پہلا پریکٹس سیشن کرنا تھا۔

اس سے قبل پاکستانی کرکٹ ٹیم کے ساتھ سفر کرنے والے میڈیا منیجر آغا اکبر نے بی بی سی کے استفسار پر اس بات کی تصدیق کی کہ پیر کے روز ہونے والی ٹیم پریکٹس منسوخ کردی گئی ہے تاہم ان کا کہنا تھا کہ کھلاڑی جمنازیم میں ایکسرسائز وغیرہ کریں گے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption ٹیم منیجمنٹ نے بھارتی کرکٹ بورڈ کی پالیسی کو اپنا تے ہوئے کھلاڑیوں کو میڈیا سے دور رکھنے کا فیصلہ کیا ہے

پاکستانی ٹیم کا اگلا میچ یکم مارچ کو زمبابوے کے خلاف برسبین میں ہے اور ٹیم اب مزید شکست کی متحمل نہیں ہوسکتی کیونکہ اس صورت میں اسے وطن واپسی کا منہ دیکھنا پڑسکتا ہے ۔

پہلے دو میچوں کی ہزیمت کے بعد پاکستان بھر میں شدید ردعمل سامنے آیا ہے ٹیم کی مایوس کن کارکردگی پر سخت تنقید کا سلسلہ جاری ہے۔

پاکستانی ٹیم پر ہونے والی تنقید کے بعد ٹیم منیجمنٹ نے بھارتی کرکٹ بورڈ کی پالیسی کو اپنا تے ہوئے کھلاڑیوں کو میڈیا سے دور رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔

عام طور پر ٹیم کی پریکٹس کے موقع پر کسی نہ کسی کھلاڑی کی میڈیا سے بات کرائی جاتی ہے لیکن موجودہ صورتحال میں کوئی بھی پاکستانی کھلاڑی تین روز تک ہونے والے پریکٹس سیشن میں میڈیا سے بات چیت کے لیے دستیاب نہیں ہوگا۔

اسی بارے میں