افغانستان ورلڈ کپ میں اپنا پہلا میچ جیتنے میں کامیاب

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption آخری اوور میں حامد حسن اور شاہپور زدران نے ٹیم کو فتح دلوائی۔

نیوزی لینڈ کے شہر ڈیونیڈن میں کرکٹ کے عالمی کپ کے پول اے کے میچ میں افغانستان نے سکاٹ لینڈ کو دلچسپ مقابلے کے بعد ایک وکٹ سے شکست دے دی۔

افغانستان کی ٹیم پہلی بار کرکٹ ورلڈ کپ میں حصہ لے رہی ہے اور یہ اس ٹورنامنٹ میں افغان ٹیم کی پہلی فتح ہے۔

تفصیلی سکور کارڈ

افغانستان نے ٹاس جیت کر سکاٹ لینڈ کو پہلے بیٹنگ کی دعوت دی تو سکاٹ لینڈ نے مقررہ پچاس اوور میں 210 رنز بنائے۔

جواب میں افغانستان نے مطلوبہ ہدف آخری اوور میں نو وکٹوں کے نقصان پر حاصل کر لیا۔

افغانستان کی فتح میں اہم کردار سمیع اللہ شنواری نے ادا کیا جنھوں نے 96 رنز کی شاندار اننگز کھیلی۔

ایک موقع پر افغانستان کے سات کھلاڑی 97 کے مجموعی سکور پر آؤٹ ہو چکے تھے لیکن پھر سمیع شنواری ڈٹ گئے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption سمیع اللہ شنواری نے 96 رنز بنائے

وہ تقریباً آخر تک کریز پر موجود رہے تاہم آخری اوور میں حامد حسن اور شاہپور زدران نے ٹیم کو فتح دلوائی۔

اس سے قبل افغان بولروں نے پوری اننگز میں سکاٹ لینڈ کی ٹیم پر دباؤ برقرار رکھا۔

سکاٹ لینڈ کی ٹیم میچ میں ایک بڑا سکور کرنے میں ناکام رہی اور ماجد حق اور میٹ میکن نے 31 رنز بنائے جو سب سے زیادہ انفرادی سکور تھا۔

افغانستان کی جانب سے شاہ پور زدران نے چار اور دولت زدران نے تین وکٹیں لیں جبکہ حامد حسن، گلبدین نائب اور محمد نبی نے ایک ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

افغانستان کی فتح کے ساتھ ہی کابل سمیت ملک کے مختلف شہروں میں شہریوں نے جشن منانا شروع کر دیا۔

لوگ قومی پرچم اٹھائے سڑکوں پر نکل آئے اور قومی ٹیم کے حق میں نعرے بازی کرتے رہے۔

افعانستان کے صدر سمیت اہم سیاسی شخصیات نے ٹیم کو اس فتح پر مبارکباد بھی دی ہے۔

اس فتح کے بعد افغانستان ٹیم کے کوچ اینڈی مولز کا کہنا تھا ’ مجھے اپنی ٹیم کی اس کامیابی پر فخر ہے۔‘

ان کا مزید کہنا تھا کہ ’ میں نے گزشتہ سالوں میں بہت سے واقعات دیکھے ہیں لیکن یہ سب سے یادگار لمحہ ہے میرے لیے۔‘

اینڈی مولز کا افغان کھلاڑیوں کا ذکر کرتے ہوئے کہنا تھا ’تمام کھلاڑی کافی پُرجوش ہیں اور انہوں نے سخت محنت کی ہے جس پر مجھے خوشی ہے۔‘