’پاکستان کو پہلے بھی ہرایا تھا، اب بھی ہرا سکتے ہیں‘

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption پاکستان اور آئرلینڈ کے درمیان میچ 15 مارچ کو ایڈیلیڈ میں کھیلا جائے گا۔

آئرلینڈ کی کرکٹ ٹیم کے بلے باز نیل او برائن کا کہنا ہے کہ ان کی ٹیم پاکستان کو اپنے آخری پول میچ میں شکست دے سکتی ہے۔

بھارت کے خلاف میچ میں شکست کے بعد ان کا کہنا تھا ’ہم نے پاکستان کو اس سے قبل بھی شکست دی ہے اور ہم جانتے ہیں کہ ہم انھیں اس بار بھی شکست دے سکتے ہیں۔‘

پاکستان اور بھارت کی ٹیموں کا موازنہ کرتے ہوئے نیل کا کہنا تھا ’بھارت ہمارے لیے ایک مشکل حریف تھا لیکن ان کے مقابلے میں ہم سمجھتے ہیں کہ ہم پاکستان کو ہرا سکتے ہیں۔‘

پاکستان اور آئرلینڈ کے درمیان میچ 15 مارچ کو ایڈیلیڈ میں کھیلا جائے گا۔

ان کا مزید کہنا تھا ’ تمام کھلاڑیوں کا اعتماد عروج پر ہے۔ بھارت کے خلاف میچ میں شکست کے باوجود کھلاڑی مسکرا رہے ہیں جو کہ اچھی بات ہے۔‘

منگل کو بھارت کے خلاف کھیلے گئے میچ میں نیل اوبرائن نے آئرلینڈ کی جانب سے سب سے زیادہ 75 رنز بنائے تھے۔

نیل او برائن کا یہ بھی کہنا ہے کہ پاکستانی بولرز اچھی بولنگ کررہے ہیں لیکن ان کے بلے باز اچھی بیٹنگ نہیں کر پا رہے ہیں۔

انھوں نے کہا ’ عالمی کپ کے اگلے مرحلے میں جانا ہی ہمارے لیے سب کچھ ہے۔‘

یاد رہے 2007 میں ویسٹ انڈیز میں ہونے والے کرکٹ کے عالمی کپ میں آئرلینڈ نے پاکستان کو شکست دے دی تھی۔

بھارت سے شکست کے باوجود آئرلینڈ کی امیدیں ابھی بھی برقرار ہیں اور پاکستان کے خلاف میچ میں جیت انھیں کوارٹر فائنل میں پہنچا سکتی ہے۔

بھارت کے خلاف میچ کے بعد بات کرتے ہوئے آئرلینڈ ٹیم کے کپتان پورٹر فیلڈ کا کہنا تھا ’ نہیں میں نہیں سمجھتا کہ اس ہار نے ہماری ٹیم کا اعتماد توڑا ہے۔ بہت سی اچھی چیزیں ہیں جو اس میچ سے ہمیں سیکھنے کو ملی۔ ‘

پورٹر فیلڈ کو لگتا ہے کہ بہت سے شعبے ایسے ہیں جن میں ان کی ٹیم کو مزید بہتری کی ضرورت ہے۔

آئرلینڈ ٹیم کے کپتان کا کہنا تھا ’ ہمیں بہت مایوسی ہوئی کیونکہ ہم مزید 50 سے 60 رنز بنا سکتے تھے۔ آپ کو بھارتی ٹیم کو بھی سراہنا ہوگا کیونکہ جیسا وہ کھیلے ہیں انھوں نے اپنے لیے میچ کو کافی آسان بنا لیا تھا۔‘

انھوں نے مزید کہا کہ ’پِچ کافی اچھی تھی لیکن ہم بھارتی اوپنرز کی طرح نہ کھیل سکے اور دونوں ٹیموں میں یہی فرق بنا۔‘

پورٹر فیلڈ کا کہنا تھا کہ وہ پرجوش انداز میں میدان میں اتریں گے کیونکہ انھیں جیتنا ہے اور جیت انھیں کوارٹر فائنل میں لے جائے گی اور وہ اس کے لیے تیار ہیں۔

ان کا کہنا تھا ’ میں یہ جذباتی ہو کر نہیں کہہ رہا بلکہ یہ کافی دلچسپ ہے۔‘

میچ کے بہترین کھلاڑی قرار پانے والے بھارتی بلے باز شیکھر دھون کا کہنا ہے کہ وہ آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ میں اپنے کھیل سے لطف اندوز ہو رہے ہیں۔

انھوں نے کہا ’ تمام کھلاڑی یہاں بہت وقت گزار چکے ہیں۔ سب کافی تجربہ حاصل کر چکے ہیں اور سب ہی اچھا کھیل رہے ہیں۔ خاص طور پر ہمارے بولرز تیز اور صحیح جگہ پر بولنگ کروا رہے ہیں۔‘

اسی بارے میں