آسٹریلیا کے خلاف عرفان کی شرکت مشکوک

محمد عرفان تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption محمد عرفان اپنے انجری کے مسائل کی وجہ سے محدود اوورز کی کرکٹ زیادہ کھیلتے ہیں

پاکستان کے بائیں ہاتھ سے گیند کرنے والے تیز باؤلر محمد عرفان کی ہپ انجری میں دوبارہ تکلیف ہونے کے بعد ان کی جمعہ کو آسٹریلیا کے خلاف ہونے والے میچ میں شرکت مشکوک ہو گئی ہے۔

خبر رساں ادارے رائٹرز کے مطابق پاکستان کرکٹ بورڈ نے پیر کو بتایا کہ عرفان دائیں کولہے میں درد کی شکایت کے بعد ایڈیلیڈ میں ایم آر آئی سکین کروانے کے لیےگئے۔

ٹیم کے فزیوتھراپسٹ بریڈ رابنسن نے بتایا کہ عرفان کا ایم آر آئی ہوا ہے۔ بیان میں کہاگیا ہے کہ ریڈیولوجسٹ کی تفصیلی رپورٹ منگل کو ملے گی۔

رانسن نے کہا کہ ’اس کے بعد ہی ان کی کوارٹر فائنل میں آسٹریلیا کے خلاف دستیابی کے متعلق ہی کوئی فیصلہ کیا جائے گا۔‘

بورڈ کے ایک اہلکار نے رائٹرز کو بتایا تھا کہ ابتدائی رپورٹیں اتنی حوصلہ افزا نہیں ہیں اور عرفان بقیہ ورلڈ کپ مس کر سکتے ہیں۔

عرفان ابھی تک ورلڈ کپ میں پاکستان کے سب سے خطرناک بولر رہے ہیں لیکن اتوار کو وہ آئرلینڈ کے خلاف اپنی انجری کی وجہ سے نہیں کھیل سکے تھے۔

32 سالہ عرفان اپنی انجری کے مسائل کی وجہ سے زیادہ تر محدود اوورز کی کرکٹ کھیلتے ہیں۔ انھوں نے اب تک صرف چار ٹیسٹ، 45 ایک روزہ اور نو ٹوئٹی 20 میچ کھیلے ہیں۔

انھوں نے ایک روزہ میچوں میں 65 وکٹیں حاصل کی ہیں اور حالیہ ورلڈ کپ میں پہلے دو میچ ہارنے کے بعد دوبارہ ٹیم کی بحالی میں اہم کردار ادا کیا ہے۔

اسی بارے میں