’جلد بازی میں فیصلے نہیں کریں گے‘

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption پاکستان کو بنگلہ دیش کے خلاف ون ڈے سیریز کے تینوں میچوں میں شکست ہوئی ہے جس پر ٹیم مینیجمنٹ کو سخت تنقید کا سامنا ہے

پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئر مین شہر یار خان نے بنگلہ دیش کے خلاف ون ڈے سیریز میں پاکستانی ٹیم کی کارکردگی کو مایوس کن قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ جلد بازی میں کوئی بھی فیصلہ نہیں کیا جائے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ بنگلہ دیش کے دورے کے اختتام پر اس کارکردگی کی وجوہات معلوم کرنے کے بعد ہی کوئی قدم اٹھایا جائے گا۔

پاکستان کو بنگلہ دیش کے خلاف ون ڈے سیریز کے تینوں میچوں میں شکست ہوئی ہے جس پر ٹیم مینیجمنٹ کو سخت تنقید کا سامنا ہے۔

اس سیریز میں پاکستانی ٹیم کی قیادت پہلی بار اظہر علی کے سپرد کی گئی تھی جبکہ ورلڈ کپ کے بعد ٹیم میں بھی رد و بدل کیا گیا تھا۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین شہر یارخان کا کہنا ہے کہ انھیں ٹیم کی کارکردگی سے سخت مایوسی ہوئی ہے لیکن بورڈ اس مرحلے پر جلدبازی میں کوئی بھی فیصلہ نہیں کرے گا بلکہ دورہ ختم ہونے کا انتظار کیا جائے گا اور اس کے بعد تمام تر صورت حال کاجائزہ لینے کے بعد جو بھی ضروری قدم ہوا وہ اٹھایا جائے گا۔

شہر یار خان نے کہا کہ پاکستانی ٹیم کا مقابلہ بنگلہ دیش کی ایک ایسی ٹیم سے تھا جس کی کارکردگی میں نمایاں بہتری آئی ہے۔

انھوں نے ٹیسٹ کپتان مصباح الحق کے بیان کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ یہ ایک نوجوان اور نئی ٹیم ہے جسے سیٹ ہونے میں ابھی وقت لگے گا۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین نے کہا کہ سیریز ہارنے کے باوجود مثبت پہلو یہ ہے کہ کپتان اظہرعلی، سمیع اسلم محمد رضوان اور سعد نسیم نے اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔

شہر یارخان نے کہا کہ اس ٹیم کو ذہنی طور پر مضبوط بنانے کے ساتھ ساتھ فیلڈنگ اور فٹنس پر توجہ کی بہت ضرورت ہے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین نے یہ بھی کہا کہ پاکستان کی ٹیسٹ اور ون ڈے رینکنگ اچھی ہے تاہم ون ڈے رینکنگ میں بہتری لانی ہوگی۔

بنگلہ دیش کے خلاف تینوں ون ڈے ہارنے کے بعد پاکستان کی ون ڈے رینکنگ ساتویں سے آٹھویں نمبر پر آ گئی ہے۔

اسی بارے میں