پاکستانی بولرز کے ہاتھ کچھ بھی نہ آیا

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption وہاب ریاض کی تیز گیندیں بھی بنگلہ دیشی اوپنروں کی وکٹیں نہ اکھاڑ سکیں

خزانہ کوئی بھی ہو کبھی بھی خالی ہوسکتا ہے۔

پاکستانی ٹیم کو کھلنا ٹیسٹ کے چوتھے دن دو سو چھیانوے رنز کی صورت میں جو خزانہ ہاتھ آیا تھا وہ اسی روز ختم ہونے کے قریب آچکا ہے۔ بنگلہ دیشی اوپنرز تمیم اقبال اور امرالقیس کی ریکارڈ شراکت کے نتیجے میں پاکستان کی برتری صرف تیئس رنز کی رہ گئی ہے۔

تمیم اقبال اور امراؤالقیس کی دو سو تہتر رنز کی یہ شراکت ٹیسٹ کرکٹ میں کسی بھی وکٹ کے لیے بنگلہ دیش کی سب سے بڑی پارٹنرشپ بھی ہے۔

بنگلہ دیش کے پچھلے ہی ٹیسٹ میں جو زمبابوے کے خلاف چٹاگانگ میں تھا ان دونوں اوپنرز نے پہلی وکٹ کے لیے دو چوبیس رنز کی بنگلہ دیش کی پہلی وکٹ کی ریکارڈ شراکت قائم کی تھی لیکن اس بار انھوں نے ایک تجربہ کار بولنگ اٹیک کےخلاف نہ صرف سنچریاں بنائیں بلکہ ڈبل سنچری شراکت بھی بنا ڈالی جو ابھی جاری ہے۔

پاکستانی بولرز کے ہاتھ کچھ بھی نہیں آیا۔مصباح الحق نے روایتی انداز میں کپتانی کرتے ہوئے اپنے پانچ بولرز ہی آزمائے۔ برے وقت میں نان ریگولر بولر کام آجاتے ہیں لیکن انھوں نے اظہرعلی کو گیند نہیں دی۔

تمیم اقبال اور امراؤالقیس نے پانچوں بولر کو بڑے اعتماد سے کھیلا۔پاکستانی ٹیم دو مرتبہ ان دونوں کو الگ کرنے کے قریب آئی لیکن تمیم اقبال کے خلاف لیےگئے ریویو پاکستان کے حق میں ثابت نہ ہوسکے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption بنگلہ دیشی بلے بازوں نے ذوالفقار بابر کو اعتماد سے کھیلا

تمیم اقبال اسوقت زبردست فارم میں ہیں۔انھوں نے ون ڈے سیریز میں بھی دو سنچریاں سکور کی تھیں اور اب وہ ٹیسٹ میں بھی پہلی بار پاکستان کے خلاف تین ہندسوں کی اننگز کھیلنے میں کامیاب ہوئے ہیں۔

امراؤالقیس نے بھی وکٹ کے دونوں طرف خوبصورت سٹروکس کھیلے، بولروں پر حاوی رہے اور پاکستان کے خلاف پہلی سنچری سکور کی۔ اس سے قبل پاکستان کی اننگز میں اسد شفیق اور سرفراز احمد دونوں سنچریوں سے محروم ہوگئے۔

اسد شفیق کی خاموش اننگز کے مقابلے میں سرفراز احمد کی اننگز میں جارحیت رہی۔ دونوں کے درمیان ایک سو چھبیس رنز کی شراکت سرفراز احمد کی وکٹ گرنے پر ختم ہوئی جس کے بعد بنگلہ دیشی بولروں نے بقیہ بیٹسمینوں کو آسانی سے قابو کرلیا۔ پاکستان کی آخری پانچ وکٹیں صرف چونتیس رنز کا اضافہ کرکے گرگئیں۔ تیج الاسلام نے اگرچہ ایک سو تریسٹھ رنز دیے لیکن چھ وکٹوں کی صورت میں سودا مہنگا نہ تھا۔

کھلنا ٹیسٹ بظاہر ڈرا کی طرف جا رہا ہے لیکن کسی چونکادینے والی کارکردگی کے نتیجے میں یہ کسی طرف بھی اپنا راستہ بدل سکتا ہے۔

اسی بارے میں